.

لبنان : بم حملے کی سازش کے الزام میں داعش کا منصوبہ ساز گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان میں حکام نے ایک مشتبہ لبنانی کو خودکش بم حملے کی سازش کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔ لبنان کی سرکاری خبررساں ایجنسی این این اے کے مطابق یہ مشتبہ شخص داعش کے ایماء پر خودکش بم حملے کی منصوبہ بندی کررہا تھا۔

اس مشتبہ ملزم نے پولیس کو بتایا ہے کہ لبنان کے شمالی علاقے میں جنگجوؤں نے اس کو عسکری تربیت دی تھی اور عراق میں موجود داعش کے ایک جنگجو نے اس کو انٹرنیٹ کے ذریعے بارود ی بیلٹ تیار کرنے کا طریقہ سکھایا تھا۔

ایک سکیورٹی ذریعے کا کہنا ہے کہ خودکش بم حملے کی یہ سازش ابھی ابتدائی مرحلے میں تھی۔واضح رہے کہ داعش کے جنگجو ماضی میں دارالحکومت بیروت سمیت لبنان کے مختلف علاقوں میں بم حملے کرچکے ہیں۔

نومبر 2015ء میں داعش کے جنگجوؤں نے بیروت کے جنوبی علاقے میں دو خودکش بم دھماکے کیے تھے۔ یہ علاقہ شیعہ ملیشیا حزب اللہ کا مضبوط گڑھ سمجھا جاتا ہے۔لبنانی سکیورٹی ذرائع نے داعش پر گذشتہ سال موسم گرما میں مسیحی آبادی کے ایک گاؤں میں آٹھ خودکش بم دھماکے کرنے کا الزام عاید کیا تھا۔ ان بم دھماکوں میں پانچ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔