.

قطری،ایرانی مداخلت کے مقابلے میں سعودی عرب نے ہمیشہ ہمارا تحفظ کیا: شاہِ بحرین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بحرین کے شاہ حمد بن عیسیٰ آل خلیفہ نے کہا ہے کہ ان کے ملک نے ہمیشہ سعودی عرب کا ساتھ دیا ہے اور سعودی مملکت نے قطری اور ایرانی مداخلت کے مقابلے میں ان کے ملک کا تحفظ کیا ہے۔

بحرینی شاہ سعودی عرب کے دورے پر ہیں۔ انھوں نے بدھ کے روز جدہ میں شاہ سلمان بن عبدالعزیز سے ملاقات کی ہے اور ان سے دوطرفہ تعلقات اور قطری بحران کے تناظر میں خطے کی تازہ صورت حال پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

انھوں نے ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ سعودی عرب میں خطے کی تازہ صورت حال پر گفتگو کے لیے ہی نہیں آئے ہیں بلکہ ان کے دورے کا مقصد سعودی عرب کی جانب سے بحرین کی مد د و حمایت پر تشکر اور تحسین کا اظہار بھی ہے۔ان کا کہنا ہے کہ سعودی عرب نے ہمیشہ قطری اور ایرانی مداخلت کے مقابلے میں بحرین کی سلامتی اور استحکام کا تحفظ کیا ہے۔

شاہ حمد نے کہا کہ ’’قطر اور ایران متعدد دوسرے ممالک میں بھی مداخلت کررہے ہیں۔اس سے ہمارے عرب اور مسلم برادر متاثر ہوئے ہیں۔اس کے بعد ہمارے لیے اپنی سلامتی اور استحکام کے تحفظ کے سوا کوئی چارہ کار نہیں رہ گیا تھا اور اسی مقصد کے لیے حالیہ اقدامات کیے گئے ہیں‘‘۔

انھوں نے کہا: ’’ ہم قطر پر زور دیں گے کہ وہ اپنی پالیسیوں کو درست کرے، سمجھوتوں کی پاسداری کرے ،ہمارے ممالک کی سلامتی اور معاشروں کے اتحاد کے لیے خطرے کا موجب بننے والے اقدامات کا خاتمہ کرے۔اس صورت میں ہی قطر کے ساتھ ہمارے تعلقات سابقہ سطح پر بحال ہوسکتے ہیں‘‘۔

شاہ حمد کا کہنا تھا :’’ بحرین نے اپنی پوری تاریخ میں سعودی بھائیوں کے ساتھ اظہار یک جہتی کیا ہے۔سعودی مملکت کے ساتھ اپنے دین ،عرب شناخت ، بقائے باہمی اور اپنی خود مختاری کے تحفظ اور اچھے ہمسائیگی کے تعلقات برقرار رکھے ہیں‘‘۔