یمن میں ہیضہ سے 800 اموات، ایک لاکھ افراد بدستور متاثر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

عالمی ادارہ صحت کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیاہے کہ یمن میں ہیضہ کی وباء کے نتیجے میں اس بیماری سے متاثر ہونے والے شہریوں کی تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے جب کہ ڈیڑھ ماہ میں 800 کے لگ بھگ افراد اس موذی مرض کے نتیجے میں لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عالمی ادارہ صحت کے ترجمان طارق یاسر فیٹچ نے جنیوا میں صحافیوں کو بتایا کہ 27 اپریل کے بعد یمن میں جاری ہیضہ کی وبا سے 1 لاکھ 18 ہزار 20 افراد کے ہیضہ سے متاثر ہونے کی تصدیق کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ یمن کی 19 گورنریوں میں 798 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

مبصرین کا کہنا ہے کہ یمن میں ایران نواز حوثیوں کی بغاوت اور اس کےنتیجے میں جاری جنگ کے باعث شہریوں کو خوراک اور ضروری علاج کی سہولیات کےحصول میں مشکلات کا سامنا ہے۔ بنیادی طبی سہولیات کے فقدان کے باعث ہیضہ کی بیماری نے ایک وباء کی شکل اختیار کرچکی ہے جو اب تک ایک ہزار کے قریب جانی لے چکی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں