.

ایران میں بم دھماکوں کے شبے میں 41 افراد گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی وزارت داخلہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ پولیس نے گذشتہ دنوں تہران میں ہونے والے دہرے بم حملوں میں ملوث ہونے کے شبے میں 41 مشتبہ شدت پسندوں کوحراست میں لیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایران کے سرکاری ٹیلی ویژن نے وزار داخلہ کا ایک بیان نقل کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں اور مشتبہ افراد کے اہل خانہ کے باہمی تعاون سے ملک کے مختلف صوبوں میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث 41 افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔ ان کے قبضے سے اسلحہ اور اہم دستاویزات بھی برآمد کی گئی ہیں۔

قبل ازیں ایرانی ٹی وی نے انٹیلی جنس حکام کے حوالے سے بتایا تھا کہ تہران میں گذشتہ بدھ کو ہونے والے بم دھماکوں میں ملوث ہونے کے شبے میں دو افراد کو حراست میں لیا ہے۔ ٹی وی رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ انٹیلی جنس حکام نے مغربی ایران کے کرمان شاہ شہر میں دہشت گردوں کے متعدد سیل کا پتا چلا کران کے خلاف کارروائی شروع کی ہے۔

’میزان آن لائن‘ ویب سائیٹ کے مطابق تہران میں ہونے والے دھماکوں میں ملوث ہونے کے شبے میں جنوبی ضلع فارس سے سات افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ بدھ کو ایرانی دارالحکومت تہران میں پارلیمنٹ ہاؤس اور آیت اللہ خمینی کے مزار کے باہر ہونے والے دھماکوں میں کم سے کم 17 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔