.

جیمز میٹس امریکی فوج کی کم زورجنگی تیاریوں پر ’’صدمہ زدہ‘‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس نے کہا ہے کہ وہ پینٹاگان میں واپسی کے بعد سے اپنی فوج کی کم زور حربی تیاریوں پر ’’صدمے‘‘ سے دوچار ہیں۔انھوں نے ایوان انمائندگان کی آرمڈ سروسز کمیٹی کے روبرو بیان دیتے ہوئے امریکی فوج کی حربی تیاریوں کے بارے میں اس رائے کا اظہار کیا ہے۔

جیمز میٹس نے ، جوخود میرین کور کے ریٹائرڈ جنرل ہیں ،کانگریس کو اس صورت حال کا ذمے دار ٹھہرایا ہے جس نے ان کے بہ قول بروقت فوج کے لیے بجٹ کی منظوری نہیں دی اور اس نے دفاعی اخراجات کی سخت تحدیدات سے متعلق ایک قانون کو بھی منسوخ کردیا تھا۔

جیمز میٹس نے کہا کہ ’’کانگریس خود ہی اپنے آئینی نگرانی کے کردار سے دستبردار ہوگئی ہے اور وہ فوج کے لیے نئے ہتھیاروں اور دوسرے ضروری سازوسامان کی خریداری کی غرض سے بروقت رقوم مہیا کرنے میں ناکام رہی ہے‘‘۔

پینٹاگان کے سربراہ نے امریکا میں مزید فوجی اڈے بند کرنے کی ضرورت پر بھی زوردیا ہے جبکہ کانگریس پہلے ہی ان فوجی اڈوں کی بندش کی مخالفت کر چکی ہے کیونکہ کانگریس کے ارکان اپنے اپنے علاقوں میں ان اڈوں کو برقرار رکھنا چاہتے ہیں۔