.

قطر کا دفاع براہ راست ایران کا دفاع ہے: حوثی وزیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

صنعاء میں یمنی باغیوں کی غیر تسلیم شدہ حکومت کے حوثی وزیر حسن زید نے قطر کے لیے ایران کی سپورٹ کی وجوہات کا انکشاف کرتے ہوئے باور کرایا ہے کہ "قطر کا دفاع براہ راست ایران کا دفاع ہے"۔

سینئر یمنی سیاست دان حسن زید طویل عرصے سے نظریاتی اور فرقہ وارانہ طور پر حوثیوں کے ساتھ ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ "قطر نے چند ماہ قبل ایران کے ساتھ مشترکہ دفاع کے معاہدے پر دستخط کیے۔ دونوں ملکوں کے درمیان مشترکہ سمندری حدود ہیں لہذا قطر کی سپورٹ ایران کے مفادات میں ہے"۔

باغیوں کی حکومت میں نوجوان اور کھیل کے وزیر حسن زید نے ایران کی ذہانت کی تعریف کی کہ اس نے عسکری مقابلے میں سامنے رہنے کے لیے ترکی کی حوصلہ افزائی کی تا کہ ایران پر اس الزام میں اضافہ نہ ہو کہ وہ خطے میں توسیع چاہتا ہے۔

زید نے یمن کے صوبے صعدہ کی جنگوں میں حوثی باغیوں اور یمنی حکومت کے درمیان قطر کو ثالثی بنانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔
حوثی وزیر کے مطابق ترکی بھی قطر پر دھاوے کی لپیٹ میں نشانہ بن گیا ہے تاکہ "قطر" کے حلیف کو دشمن میں بدل کر علاقائی سطح پر اس کے موقف کو کمزور کیا جائے۔

حزب الحق کے سکریٹری جنرل حسن زید کو لبنانی ملیشیا کے سربراہ حسن نصر اللہ کے قریب سمجھا جاتا ہے۔ وہ ایران میں خمینی انقلاب کے سب سے بڑے حمایتیوں میں سے ہے۔ حسن کئی برس سے حوثی ملیشیاؤں اور تہران کے درمیان قائم رابطوں میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔

کچھ عرصہ قبل یمنی ذرائع ابلاغ نے انکشاف کیا تھا کہ حسن زید دارالحکومت صںعاء میں خواتین کے کئی کیمپوں کی نگرانی کر رہا ہے۔ یہاں حوثی خاندانوں کی خواتین جنگجوؤں کو ہتھیار استعمال کرنے اور مسلح مقابلے کی تربیت دی جاتی ہے۔