.

بیلجیم میں پولیس نے مشتبہ حملہ آور کو گولی مار دی

حملہ آور نے دھماکے سے قبل ’’اللہ اکبر‘‘ کا نعرہ بلند کیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بیلجیئم میں پولیس کا کہنا ہے کہ دارالحکومت برسلز کے مرکزی ریلوے سٹیشن میں ایک شخص نے ایک چھوٹے پیمانے کا بم دھماکہ کیا ہے اور اس مبینہ خودکش حملہ آور کو جائے وقوع پر موجود پولیس اہلکاروں نے گولی مار کر ہلاک کر دیا ہے۔

سٹیشن پر موجود اہلکاروں نے بتایا کہ ایک مشتبہ شخص نے خودکش جیکٹ پہن رکھی تھی، اس نے اسٹیشن پر ایک چھوٹا دھماکہ بھی کیا جس کے بعد اسے گولیاں مار کر ہلاک کردیا۔ اطلاعات کے مطابق اس حملے میں کوئی اور شخص زخمی نہیں ہوا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آور نے اسٹیشن میں داخل ہونے کے بعد نعرہ تکبیر’اللہ اکبر‘ بلند کیا تھا۔

حکام کا کہنا ہے کہ مشتبہ حملہ آورنے ’اللہ اکبر‘ کا نعرہ لگایا جس کے بعد اس کے سامان کی ریڑھی میں دھماکہ ہوگیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ جائے وقوع کو خالی کروا لیا گیا ہے اور صورتحال حکام کے قابو میں ہے۔

یاد رہے کہ مارچ 2016 میں برسلز میں ایک حملے میں 32 افراد ہلاک ہوئے تھے جس کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ نے ذمہ داری قبول کی تھی۔

مقامی میڈیا نے پراسیکیوٹرز کے حوالے سے بتایا ہے کہ حملہ آور شخص نے ایک بوری نما لباس پہن رکھا تھا اور اس کی بیلٹ پر بم نصب تھا۔

اس شخص نے جب بم کا دھماکہ کیا تو سٹیشن پر موجود پولیس کی توجہ اس کی جانب گئی جس کے بعد انھوں نے اسے گولی مار دی۔

حملے کے بعد قریبی دکانوں اور ریسٹورانوں کو خالی کروا لیا گیا ہے۔ اس کے لیے سٹیشن سے گزرنے والی ٹرینوں کو بھی معطل کر دیا گیا تھا۔