.

علی صالح کے مقرب رہ نما کا حوثیوں سے اتحاد ختم کرنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی جنرل پیپلز کانگریس کے ایک سینیر رہ نما اور سابق مںحرف صدر کے قریبی ساتھی عادل الشجاع نے علی عبداللہ صالح سے ایران نواز حوثیوں سے اتحاد ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ’فیس بک‘ پر پوسٹ کردہ ایک بیان میں عادل الشجاء نے حوثیوں اور اپنی جماعت کی لیڈروں کے درمیان مسلسل اتحاد کی مذمت کی۔ ان کا کہنا تھا کہ حوثیوں سے اتحاد برقرار رکھنا ان کے قوم کے خلاف جرائم، لوٹ مار اور عوام کے بنیادی حقوق کی سنگین پامالیوں پر پردہ ڈالنے کے مترادف ہے۔

ان کا کہنا مزید کہنا ہے کہ حوثیوں کے ساتھ اتحاد کرنے سے ایسے لگتا ہے کہ نیشنل کانگریس کی قیادت کی یاداشت کھو گئی ہے۔

عادل الشجاع نے سابق صدر علی عبداللہ صالح کے مقربین اور ان کے مشیروں پر حوثیوں کے ساتھ ملی بھگت جاری رکھنے کا الزام عاید کیا۔ انہوں نے کہا کہ سابق صدر کے مشیروں کے طرز عمل سے لگتا ہے کہ وہ جرات مندانہ فیصلوں کی صلاحیت کھو چکے ہیں۔ الشجاع نے کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ سابق صدر علی صالح اور ان کے ساتھ حوثیوں سے اتحاد ختم کردیں۔

خیال رہے کہ یمن میں آئینی حکومت کے خلاف بغاوت کرنے والے ایران نواز حوثیوں اور سابق مںحرف صدر علی صالح کے درمیان سیاسی اتحاد قائم ہے۔ دونوں گروپ مل کر آئینی حکومت کے خلاف بر سرجنگ ہیں۔

یہ پہلا موقع نہیں جب پیپلز کانگریس کے کسی رہ نما نے سابق صدر علی صالح سے حوثیوں سے علاحدگی اختیار کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اس سے قبل کئی دوسرے رہ نما بھی ایسے مطالبات کرتے آئے ہیں۔