فلپائن کے صدر کی متنازع روپوشی کا راز؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلپائن کی حکومت نے منگل کے روز بتایا ہے کہ صدر روڈریگو ڈوٹیرٹے زندہ اور مکمل خیریت سے ہیں اور صحت کے حوالے سے کسی مسئلے سے دوچار نہیں ہیں۔ یہ وضاحت فلپائن کے صدر کے رواں ماہ طویل عرصے تک نظروں سے اوجھل رہنے پر پیدا ہونے والی تشویش کے بعد سامنے آئی ہے۔

روڈریگو (72 سالہ) اپنی بھرپور سرگرمیوں اور طویل تقاریر کے سبب معروف ہیں۔ منظر عام سے ان کی روپوشی نے مختلف افواہوں کو جنم دیا جن میں کہا گیا کہ فلپائن کے صدر کی صحت خراب ہے اور حکومت اس پر پردہ ڈالنے کی کوشش کر رہی ہے۔ آخری مرتبہ وہ ایک ہفتہ قبل اعلانیہ طور پر ظاہر ہوئے تھے۔

ان میں اکثر قیاس آرائیوں کا بنیادی سبب یہ تھا کہ روڈریگو کی غیر حاضری ان کے دور حکومت کے سب سے بڑے بحران کے دوران سامنے آئی۔ یہ بحران تقریبا ایک برس قبل شروع ہوا اور ان کی فوج تقریبا 6 ہفتوں سے داعش تنظیم سے تعلق رکھنے والے اُن شدت پسندوں کے ساتھ لڑائی میں مصروف ہے جنہوں نے جزیرہ میندانا میں مراوی شہر پر قبضہ کر رکھا ہے۔ یہ جزیرہ صدر روڈریگو کا آبائی علاقہ ہے۔

صدارتی ترجمان ارنسٹو اپیلا نے صحافیوں کو بتایا کہ "جیسا کہ آپ لوگوں نے دیکھا کہ صدر بہت زیادہ اعلانیہ طور پر ظاہر ہو رہے تھے تاہم اب وہ حقیقتا بہت مصروف ہیں۔ وہ دفتر ذمے داریاں انجام دے ہے ہیں۔ وہ کاغذات دستخط کرنے کے علاوہ مشاورت بھی کر رہے ہیں"۔ ترجمان نے مزید کہا کہ "صدر کو حالات اور واقعات کا علم ہے اور انہیں باقاعدہ طور پر ہر قسم کی پیش رفت سے آگاہ کیا جا رہا ہے۔ وہ سب کچھ پڑھ بھی رہے ہیں اور سن بھی رہے ہیں"۔

روڈریگو منگل کے روز بعض حکومتی ارکان سے ملاقات کریں گے اور منیلا کے صدارتی محل میں عید الفطر کی مناسبت سے ایک پروگرام میں بھی شرکت کریں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں