.

یمن: ہادی حکومت کے تحت تین صوبوں کے نئے گورنروں کا تقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی نے تین صوبوں شبوہ ، حضرموت اور السقطری کے نئے گورنروں کا تقرر کیا ہے۔

صدر منصور ہادی نے ایک فرمان کے تحت میجر جنرل صالح قائد الزندانی کو ڈپٹی چیف آف جنرل اسٹاف اور میجر جنرل ناصر عبداللہ ناصر رویس کو مسلح افواج کی آپریشنز اتھارٹی کا سربراہ مقرر کیا ہے۔

یمن کی سرکاری خبررساں ایجنسی سبا نے جمعرات کو اطلاع دی ہے کہ صدر ہادی نے بدھ کو تین نئے گورنروں کے تقرر کے لیے صدارتی فرمان جاری کیا تھا۔ اس کے تحت میجر جنرل فرج سالمین البحسنی کو حضرموت کا گورنر مقرر کیا گیا ہے اور ان کے پیش رو بریگیڈئیر جنرل احمد سعید بن بیرک کو ہٹا دیا گیا ہے۔ میجر جنرل البحسنی نے وادی حضر موت کے دارالحکومت میں سيؤون شہر میں سیکنڈ ملٹری زون کی کمان بھی سنبھال لی ہے۔

صدارتی فرمان کے تحت علی بن راشد الحرثی کو شبوہ کا گورنر مقرر کیا گیا ہے۔ صوبہ سقطری کے گورنر سالم السقطری کو ہٹا دیا گیا ہے اور ان کی جگہ احمد عبداللہ علی السقطری کو نیا گورنر مقرر کیا گیا ہے۔

تینوں صوبوں کے سبکدوش کیے گئے گورنر جنوبی عبوری کونسل کے ارکان تھے۔ اس کو نسل کو صدر منصور ہادی کی حکومت کی حزب اختلاف قرار دیا جاتا ہے۔