ولادی میر پوتین کا شاہِ بحرین سے ٹیلی فون پر قطر بحران پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

روسی صدر ولادی میر پوتین نے بحرین کے شاہ حمد بن عیسیٰ آل خلیفہ سے ہفتے کے روز ٹیلی فون پر قطر اور خلیجی عرب ممالک کے درمیان جاری تنازع کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا ہے۔

کریملن کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق صدر پوتین نے تنازع کی فریق تمام حکومتوں کے درمیان براہ راست بات چیت کی ضرورت پر زوردیا ہے۔انھوں نے کہا کہ اس تنازع سے پورے مشرقِ وسطیٰ پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں۔

سعودی عرب ،مصر ،بحرین اور متحدہ عرب امارات نے 5 جون کو قطر کے ساتھ ہر قسم کے سیاسی ،سفارتی اور تجارتی تعلقات منقطع کر لیے تھے اور پھر اس کو تیرہ مطالبات کی ایک فہرست پیش کی تھی اور اس سے کہا تھا کہ ان مطالبات کو پورا کرنے کی صورت ہی میں اس کا بائیکاٹ ختم کیا جاسکتا ہے۔قطر کو ان مطالبات کو پورا کرنے کے لیے 3 جولائی کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے۔

بائیکاٹ کرنے والے چاروں ممالک نے قطر سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ دوسرے ممالک میں مداخلت پر مبنی اپنی جارحانہ خارجہ پالیسی اور دہشت گردی کی حمایت سے دستبردار ہوجائے ۔قطر ان الزامات کی تردید کرچکا ہے کہ وہ دہشت گردی کی کسی طرح سے کوئی معاونت کررہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں