.

اماراتی خاتون کے پیٹ سے 17 کلو گرام رسولی برآمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی ایک طبی ٹیم نے شدید خطرے سے دوچار ایک مریضہ کی سرجری کرکے نہ صرف اس کی زندگی بچالی بلکہ اس کے پیٹ سے 17.5 کلو گرام کی رسولی نکالی گئی ہے۔ متحدہ عرب امارات میں یہ اپنی نوعیت کا منفرد کیس ہے جس میں ایک خاتون کے پیٹ سے اتنی بھاری رسولی نکالی گئی۔

اماراتی اخبار’دی نیشنل‘ کے مطابق مریضہ پیشے کے اعتبار سے ایک استانی ہے جس کی عمر 35 سال ہے۔ اسے حال ہی میں دبئی میں قائم لطیفہ اسپتال کے ایمر جنسی وارڈ میں داخل کیا گیا۔

گذشتہ جمعہ کو جب خاتون کو اسپتال لایا گیا تو اس کی حالت انتہائی تشویشناک تھی۔ ڈاکٹروں نے اس کا ضروری طبی معائنہ کرنے کے بعد پیٹ کی سرجری کا فیصلہ کیا۔ ڈاکٹروں نے نہایت احتیاط کے ساتھ مسلسل تین گھنٹے تک جاری رہنے والی سرجری کے دوران ساڑھے سترہ کلوگرام کا ورم تلف کرتے ہوئے خاتون کی بچہ دانی سے رسولی نکال کر اس کی زندگی بچالی۔

اسپتال میں شعبہ امراض نسواں کی انچارج ڈاکٹر امل القدرہ نے بتایا کہ مریضہ کے پیٹ کے معائنے سے پتا چلا کہ اس کے پیٹ میں 35 سے 40 سینٹی میٹر کی رسولی ہے جس کے نتیجے میں اسے شدید تکلیف ہے اور اس کے پھیپھڑوں کو بھی خطرات لاحق ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ مریضوں کے جسم میں رسولی کی موجودگی کی کیسز تو بہت آتے ہیں اتنی بڑی رسولی آج تک نہیں دی گئی۔