.

بھارت: سَر جُڑے بچوں کے ماں باپ کا خواب کیا ہے ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارتی ریاست اُڑیسا کے ضلع کندھمال میں ایک غریب گھرانے سے تعلق رکھنے والی 25 سالہ پُشپانجلی کنہار کے یہاں 2015 میں سر جُڑے بچوں کی پیدائش ہوئی تو اس کو شدید صدمہ پہنچا۔ اب کنہار کی زندگی کا سب سے بڑا خواب یہ ہے کہ اُس کے دونوں بیٹوں ہنی اور سنگھ کے سر علاحدہ ہو جائیں تا کہ وہ قدرتی انداز سے اپنی زندگی گزار سکیں۔ رواں ہفتے ڈاکٹروں نے بچوں کے ممکنہ آپریشن کے حوالے سے کنہار سے رابطہ کیا ہے جو یہ آس لگا کر بیٹھی ہے کہ اس کے دونوں بچے آپریشن کے بعد معمول کے مطابق زندگی گزارنا شروع کر دیں گے۔

کنہار کا کہنا ہے کہ اس کو بچوں کی پیدائش کے وقت کسی پیچیدگی کا علم نہیں ہوا تاہم بعد میں ہسپتال کے دوسرے کمرے میں دونوں بچوں کی کھوپڑیوں کو جُڑا ہوا دیکھ کر وہ حیران رہ گئی۔ پیدائش کے بعد ابتدائی معائنے سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ دونوں بچوں کے دماغ علاحدہ ہیں جب کہ کھوپڑی مشترکہ ہے۔

اُڑیسا کی حکومت نے دونوں بچوں کے علاج کے لیے مدد کا وعدہ کیا ہے۔ اس سلسلے میں کنہار اور اس کا شوہر نئی دہلی میں انڈین انسٹی ٹیوٹ فار میڈیکل سائنسز کے ہسپتال کے ڈاکٹروں سے مشاورت کریں گے۔

ہنی اور سنگھ کے علاوہ کنہار کے دو اور بچے 9 سالہ بیٹا اجیت اور 6 سالہ بیٹی داکھیا مکمل طور پر صحت مند ہیں۔