شام سمیت متعدد معاملات پر روس کے ساتھ مل کرکام کرسکتے ہیں: ڈونلڈ ٹرمپ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ان کی اپنے روسی ہم منصب ولادی میر پیوتین کے ساتھ’’ طویل ملاقات اچھی رہی۔‘‘ جرمنی کے شہر ہیمبرگ میں جی20 سمٹ کے موقع پر ہونے والی اس ملاقات سے ظاہر ہوتا ہے کہ دونوں ملک شام میں فائر بندی جیسے معاملات پر مل کر کام کر سکتے ہیں جہاں دونوں کے مفادات مشترکہ ہیں۔

’’کرسچئین براڈکاسٹنگ نیٹ ورک‘‘ کو خصوصی انٹرویو میں ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ’’ہماری ملاقات بہت ہی اچھی رہی۔ ہماری طرح روس بھی ایک طاقتور نیوکلیئر پاور ہے۔ ایسی صورتحال میں ہمارے باہمی تعلق کا نہ ہونا اچھنبے کی بات لگتا ہے۔‘‘

ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک سوال کے جواب صدارتی انتخاب میں ڈیموکریٹک امیدوار ہیلری کلنٹن کے حوالے سے بھی تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’روسی صدر پیوتین ، مسز کلنٹن کے صدر بننے پر زیادہ خوش ہوتے کیونکہ وہ امریکی فوج پر اتنا خرچ نہ کرتے جتنا وہ [ٹرمپ] کرنا چاہتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں