.

بھارت: لڑکی جنم دینے پر دیور نے بھابھی کو ہاکی سے پیٹ ڈالا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اکیس ویں صدی میں بھی لوگ کس حد تک جہالت کا شکار ہیں اس کا ایک نمونہ تین روز قبل آبادی کے لحاظ سے دنیا کے دوسرے بڑے ملک بھارت میں دیکھنے میں آیا۔

سوشل میڈیا پر گردش میں آنے والی وڈیو میں پٹیالہ سے تعلق رکھنے والی 35 سالہ خاتون مینا کاشیاپ کو اُس کا دیور اپنے دوست کے ساتھ مل کر ہاکی سے بُری طرح پیٹتے ہوئے دکھائی دے رہا ہے۔ مینا کی اس پٹائی کی وجہ یہ تھی کہ اس کے شوہر کا خاندان بیٹے کی پیدائش کی توقع کر رہا تھا جب کہ مینا نے بیٹی کو جنم دیا۔

بھتیجی کی پیدائش پر اپنے بھائی کی بیوی کو مبارک باد دینے کے بجائے مینا کا دیور کمل جیت سنگھ اپنے دوست کو لے کر بھابھی کے گھر پہنچا اور دونوں نے مل کر ہاکی سے مینا کی دل کھول کر پٹائی کی۔ اس دوران مینا کے ایک پڑوسی نے اس منظر کو اپنے موبائل کے کیمرے کی آنکھ سے محفوظ کر لیا۔ ضمیر کو جھنجھوڑ دینے والی وڈیو کے یوٹیوب پر پوسٹ ہونے کے بعد سماجی حلقوں میں ایک طوفان کھڑا ہو گیا ہے۔ وڈیو میں وحشیانہ تشدد کا نشانہ بننے والی مینا کی چیخوں اور مدد کے لیے پکار کی آوازیں سنائی دے رہی ہیں مگر کسی نے بھی اس کی مدد نہ کی۔

بھارتی اخبار Hindustan Times کے مطابق مینا کے گھر والوں نے اس کے شوہر دلجیت سنگھ ، دیور کمل جیت سنگھ اور دیور کے دوست تینوں افراد کے خلاف متعدد الزامات کے تحت رپورٹ درج کرا دی ہے۔ کمل جیت اور اس کے دوست کو مینا کے گھر میں دراندازی کرنے اور مینا کو بری طرح سے پیٹنے کے سبب گرفتار کر لیا گیا ہے۔

طبی سائنس میں یہ بات معروف ہے کہ جنم لینے والے بچے کی جنس کے تعین کا تعلق مرد سے ہوتا ہے نہ کہ عورت سے.. قرآن کریم میں 14 صدیوں پہلے ہی سورت القیامہ اور سورت النجم میں اس معاملے پر روشنی ڈال دی گئی تھی۔