ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر تین مصری ٹی وی چینل بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر میں ذرائع ابلاغ کی نگران میڈیا ریگولیٹر سپریم کونسل نے پیشہ وارانہ امور کی خلاف ورزی اور میڈیا کے سرکاری ضابطہ اخلاق کے خلاف نشریات پیش کرنے پر غیر معینہ مدت کے لیے تین ٹی وی چینلوں کو نشریات پیش کرنے سے روک دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ریگولیرٹی کونسل کے زیرانتظام قائم شکایات سیل نے پیشہ وارانہ اور ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر متعدد ٹی وی میزبانوں سے تحقیقات بھی شروع کی ہیں۔

جمعرات کے روز شکایات سیل کے اجلاس کے دوران کونسل کو سفارش کی گئی کہ وہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی شکایت پر ’ایل ٹی وی‘ ’العاصمہ‘ اور ’النھار‘ ٹی وی چینلوں کو نشریات سے روک دے۔ تمام ٹی وی چینلوں کو اس بات کا پابند بنایا گیا ہے کہ جب تک ان کی نشریات بند رہیں گی وہ نشریات کی بندش کا تحریری نوٹس چلائیں گے۔ ان تینوں ٹی وی چینلوں کے خلاف سامنے آنے والی شکایات پر آئندہ بدھ کو دوبارہ غور کیا جائے گا۔

سپریم میڈیا ریگولیٹری کونسل نے شکایات سیل کی سفارشات پرعمل درآمد کرتے ہوئے مذکورہ تینوں ٹی وی چینلوں کو نشریات سے روک دیا ہے۔

تینوں ٹی وی چینلوں کی بندش کے ساتھ ساتھ پروگرام پیش کاروں ایل ٹی وی کے محمد الغیطی،’العاصمہ‘ کے پروگرام انفراد کے میزبان سعید حساسین اور النھار ٹی وی کی خاتون میزبان ریھام سعید کے خلاف آنے والی شکایات کی تحقیقات کی بھی سفارش کی گئی ہے۔ ان پر پیشہ وارانہ امور کی خلاف ورزی اور میڈیا کے طے شدہ ضابطہ اخلاق کے خلاف مواد پیش کرنے کا الزام عاید کیا گیا ہے۔

کمیٹی کے چیئرمین جمال شوقی نے ایک بیان میں بتایا کہ تینوں ٹی وی چینلوں سے وابستہ متعدد صحافیوں کے خلاف ملنے والی شکایات کے بعد انہیں بند کیا جا رہا ہے۔

جمال شوقی کا کہنا ہے کہ ایل ٹی وی کے خلاف حال ہی میں ایک شکایت آئی تھی کہ اس کی ایک خاتون میزبان نے لائیو پروگرام منشیات کے استعمال کا طریقہ بتانے کی متنازع کوشش کی تھی جس اسے پروگرام کی میزبانی سے روک دیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں