.

سعودی عرب انتہا پسندی سے نمٹنے کے لیے انتھک کوششیں کررہا ہے: عبداللہ المعلمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے مستقل مندوب عبداللہ المعلمی نے کہا ہے کہ ان کے ملک نے انتہا پسندی سے نمٹنے کے لیے ان تھک کوششیں کی ہیں اور اب بھی کررہا ہے۔

عبداللہ المعلمی نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب دہشت گردی کی تمام کارروائیوں کی مذمت کرتا ہے اور اس بات پر زور دیتا ہے کہ دہشت گردی سے نمٹنا ایک مشترکہ بین الاقوامی ذمے داری ہے اور اس کے استیصال کے لیے جامع اور پائیدار کوششوں کی ضرورت ہے۔

دریں اثناء منامہ میں دہشت گردی مخالف چار عرب ممالک سعودی عرب ، متحدہ عرب امارات ،بحرین اور مصر کے وزرائے خارجہ کا ہفتے کے روز اجلاس ہو رہا ہے۔اس میں قطر کے ساتھ عرب ممالک کے جاری بحران اور اس کی جانب سے دہشت گردی کی حمایت کی روک تھام سے متعلق امور پر غور کیا جارہا ہے۔