سپریم لیڈر صرف تین وزراء کے تقرر کے مجاز ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے دفتر سے جاری کردہ ایک بیان میں ان اطلاعات کی سختی سے تردید کی گئی ہے کہ صدر اپنی کابینہ میں شامل تمام وزراء کی منظوری سپریم لیڈر سے لیتے ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ آیت اللہ علی خامنہ کابینہ میں اپنی مرضی سے صرف تین وزراء کو شامل کرنے کے مجازہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سپریم لیڈر کے دفتر سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ دستور کے تحت سپریم لیڈر کو خارجہ، دفاع اور قومی سلامتی سے متعلق پالیسیوں کی تشکیل کے خصوصی اختیارات حاصل ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ صدر مملکت وزیرخارجہ، دفاع اور قومی سلامتی کے وزیر کے عہدےکے لیے نامزد شخصیات کے بارے میں سپریم لیڈر سے مشورے کا پابند ہوتا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ جمعہ کو ایرانی ذرائع ابلاغ نے انکشاف کیا تھا کہ صدر حسن روحانی اپنی نئی کابینہ کا اعلان آئندہ 10 ایام میں کریں گے۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ صدر حسن روحانی کابینہ میں شامل تمام وزراء کی فہرست سپریم لیڈر کے سامنے بھی پیش کریں گے۔

تاہم ایرانی سپریم لیڈر کے دفتر سےجاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ سپریم لیڈر کابینہ کے تمام وزراء کا تقرر اپنی مرضی سے نہیں کرتے۔ تمام وزراء کی فہرست سپریم لیڈر کے سامنے پیش کرنے کی باتیں محض افواہیں ہیں جن میں کوئی صداقت نہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں