.

یمن : سڑک کنارے نصب بم کے دھماکے میں 13 شہری ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے جنوب میں سڑک کے کنارے نصب بم کے دھماکے میں تیرہ شہری ہلاک اور سات زخمی ہوگئے ہیں۔

یمن کے ایک سکیورٹی ذریعے نے بتایا ہے کہ جنوبی صوبہ الضالع کے ضلع قعطبہ میں شاہراہ پر ایک فوجی کار کو نشانہ بنانے کے لیے بم نصب کیا گیا تھا لیکن اس کے بجائے بدقسمت شہریوں کی کار اس کا ہدف بن گئی ہے۔

صوبہ الضالع پر یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی کی وفادار فورسز کا کنٹرول ہے اور اس کے ساتھ واقع صوبہ شبوہ میں متحدہ عرب امارات کی تربیت یافتہ خصوصی فورسز نے گذشتہ ہفتے جزیرہ نما عرب میں القاعدہ کے جنگجوؤں کے خلاف ایک بڑی کارروائی شروع کی تھی۔

یمنی القاعدہ کے جنگجو سکیورٹی فورسز پر آئے دن حملے کرتے رہتے ہیں اور سوموار ہی کو ایک اور جنوبی صوبے ابین کے قصبے لودر میں ایک حملے میں یمنی آرمی کے جنرل احمد الشبیلی زخمی ہوگئے ہیں اور ان کا بیٹا ہلاک ہوگیا ہے۔

ایک فوجی ذریعے کے مطابق القاعدہ کے مسلح افراد نے یمنی جنرل اور ان کے بیٹے پر فائرنگ کی تھی۔گذشتہ ہفتے القاعدہ کے ایک خودکش بمبار نے لودر ہی میں فوج کی چوکی پر حملہ کیا تھا جس سے پانچ فوجی ہلاک اور بیس زخمی ہوگئے تھے۔