.

چاڈ کا قطری سفارت خانے کو بند اور سفارت کاروں کو بے دخل کرنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افریقی مسلم ملک چاڈ نے قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات منقطع کرنے، دارالحکومت نجامینا میں اس کا سفارت خانہ بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس کے سفارت کاروں کو دس روز میں ملک سے چلے جانے کا حکم دیا ہے۔

چاڈ نے قطر پر خود کو لیبیا کے ذریعے عدم استحکام سے دوچار کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔اس کی وزارت خارجہ نے بدھ کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’قطری ریاست کی جانب سے لیبیا سے چاڈ کو مسلسل عدم استحکام سے دوچار کرنے کی کوششوں کے بعد حکومت نے اس کا سفارت خانہ بند کرنے ، قطری سفیر اور سفارت کاروں کو اپنے قومی علاقے سے چلتا کرنے کا فیصلہ کیا ہے‘‘۔

بیان کے مطابق ’’ قطری سفارت کاروں کو ملک سے چلے جانے کے لیے دس دن کا وقت دیا گیا ہے اور یہ اقدام ملک کے امن وسلامتی کے تحفظ کے لیے کیا گیا ہے‘‘۔

وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ ’’خطے میں امن وسلامتی کے تحفظ کے لیے چاڈ قطر پر یہ زور دیتا ہے کہ وہ ایسے تمام اقدامات اور کارروائیوں سے دستبردار ہوجائے جو اس ملک اور ساحل کے دوسرے ممالک کی سلامتی کے لیے خطرات کا موجب ہوسکتے ہیں‘‘۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ دوحہ میں چاڈ کے سفارتی مشن کو بند کر دیا جائے گا اور وہاں سے سفارت کاروں کو واپس بلا یا جارہا ہے۔قطری حکام نے چاڈ کے سفارتی تعلقات منقطع کرنے کے اس فیصلے پر فوری طور پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔