لڑاکا پائیلٹ نے ہیلی کاپٹر سے کود کر خودکشی کر لی

بیلجیئن ہواباز نے معاون پائیلٹ کو جل دے کر 1000 میٹر کی بلندی سے چھلانگ لگائی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بیلجیئم میں ایک لڑاکا ہواباز نے خودکشی کا غیر روایتی انداز اپنا کر اپنی زندگی کا چراغ گل کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق بیلجیئم کی فضائیہ کا ایک Agusta A-109 فوجی ہیلی کاپٹر اتوار کے روز ایک ایئر شو میں شریک تھا۔ یہ ایئر شو دارالحکومت برسلز سے 90 کلومیٹر دور واقع قصبے Amay کی فضاؤں میں پیش کیا جا رہا تھا۔ اس دوران ہیلی کاپٹر کے ہواباز Vincent Valkenberg نے دیکھا کہ اس کا معاون اپنے ساتھیوں کو پیرا شوٹ کے ساتھ ہیلی کاپٹر سے چھلانگ لگانے میں مدد دینے میں مصروف ہے.. تو کپتان واکنبرگ نے موقع غنیمت جانا اور جنگلوں کے اوپر سے گزرتے ہوئے کاک پٹ کا دروازہ کھول کر 1000 میٹر کی بلندی سے باہر چھلانگ لگا دی۔

اتوار کو واقعے کے فورا بعد کپتان کی تلاش شروع کر دی گئی اور پیر کے روز Tihange کے ایٹمی ری ایکٹر کے نزدیک ایک دیہی علاقے میں واکنبرگ کی کٹی پھٹی لاش مل گئی۔

بیلجیئم کے میڈیا کی رپورٹوں کے مطابق کپتان واکنبرگ کی اپنی اہلیہ اور دو چھوٹے بچوں سے سے علاحدگی ہو چکی تھی جس کے سبب وہ ذہنی دباؤ کا شکار تھا۔ البتہ برطانوی اخبار دی ٹائمز نے منگل کے روز اپنی اشاعت میں باور کرایا ہے کہ 34 سالہ کپتان نے خود کو جان بوجھ کر ہیلی کاپٹر سے گرایا اور واقعے میں یقینا "خودکشی کا پہلو" غالب ترین ہے۔

ابتدائی تحقیق کے بعد اس بات کی تصدیق کر دی گئی ہے کہ معاون کپتان نے ہیلی کاپٹر کے کپتان واکنبرگ کو ہر گز نہیں گرایا۔ ہیلی کاپٹر میں تین فوجی اہل کار موجود تھے جن کو معاون کپتان نے پیرا شوٹ کے ساتھ چھلانگ لگانے میں مدد دی۔ تاہم فارغ ہونے کے بعد کاک پٹ میں واپسی پر وہ کپتان کی نشست کو خالی اور اس سے ملحقہ دروازے کو کُھلا دیکھ کر بھونچکا سا رہ گیا۔

بیلجیئم کے مقامی اخبار Le Soir کے مطابق معاون کپتان نے محفوظ طریقے سے ہیلی کاپٹر کو زمین پر اتارا اور پھر فوج اور پولیس کے اہل کاروں کے ساتھ مل کر لا پتہ ہواباز کی تلاش میں شریک ہو گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں