.

دہشت گرد حملوں کی تیاری میں مصروف ہسپانوی مراکشی سیل تحلیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ہسپانیہ کی وزارت داخلہ نے اعلان کیا ہے کہ اس نے مراکش کے ساتھ رابطہ کاری کے ذریعے ایک دہشت گرد سیل کو تحلیل کیا ہے۔ یہ سیل ایک ہسپانوی اور پانچ مراکشی باشندوں پر مشتمل ہے جو وسیع پیمانے پر حملوں کی تیاری کر رہا تھا۔

وزارت داخلہ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ مذکورہ سیل نے رات کے اوقات میں اپنی میٹنگوں کا انعقاد کیا جس کے دوران تربیتی کورسز اور گردن کاٹنے کی کارروائیوں کی ریہرسل کی گئی"۔

ادھر مراکش کی وزارت داخلہ کے مطابق حراست میں لیے جانے والوں میں ایک مراکشی نژاد ہسپانوی بھی شامل ہے جو ہسپانیہ کے خود مختار شہر ملیلیہ میں مقیم ہے۔ اس بات کی بھی تصدیق ہوئی ہے کہ یہ سیل داعش تنظیم کے مفاد میں نوجوانوں کو بھرتی کرنے کے لیے بھی سرگرم تھا۔

دہشت گرد سیل کے ارکان نے مراکش اور ہسپانیہ میں مختلف نوعیت کی دہشت گرد کارروائیوں کی منصوبہ بندی کر رکھی تھی۔
ہسپانیہ اور مراکش جن کی شمالی سرحد مشترکہ ہے. دونوں نے گزشتہ ماہ کی 17 تاریخ کو بارسلونا شہر میں ہونے والے حملے کے بعد انسداد دہشت گردی کے میدان میں سکیورٹی تعاون بڑھانے کا فیصلہ کیا تھا۔ مذکورہ کارروائی میں 18 افراد ہلاک وار 120 کے قریب زخمی ہو گئے تھے۔ حملے میں ہسپانیہ میں مقیم ایک مراکشی باشندہ ملوث تھا۔