آسٹریلیا : پہلی محجب مسلم خاتون میونسپل کونسل کی رکن منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

آسٹریلیا کے سب سے بڑے شہر سڈنی اور ایک شہر کی کونسل میں چار مسلمان منتخب ہوگئے ہیں اور ان میں ایک محجب مسلم خاتون بھی شامل ہے۔

لبنانی نژاد نادیہ صالح گذشتہ 28 سال سے آسٹریلیا میں مقیم ہیں۔وہ سٹی کونسل کی رکن منتخب ہونے سے قبل 18 سال تک ریور وڈ کمیونٹی سنٹر کی چیف ایگزیکٹو آفیسر کے طور پر خدمات انجام دی جاچکی ہیں۔

نادیہ صالح کے خاوند خدر صالح مسلسل تین مرتبہ اور تیرہ سال تک بنک ٹاؤن کے ڈپٹی مئیر رہ چکے ہیں۔انھوں نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ شہر میں ڈیڑھ لاکھ عرب تارکین وطن آباد میں ہیں اور ان میں زیادہ تر لبنانی ہیں۔ وہ بھی شہری کونسل کے انتخابات جیتنے والے پہلے عرب اور مسلمان تھے۔

بلدیاتی انتخابات میں جیتنے والے دو مسلم ارکان محمد ہدیٰ اور محمد زمان کا تعلق بنگلہ دیش سے ہے۔چوتھے رکن بلال الہائیک لبنانی شہری ہیں۔

خدر نے اپنی اہلیہ نادیہ کی جیت کو ایک اہم کامیابی قراردیا ہے۔ بین الاقوامی میڈیا کے مختلف ذرائع نے ان کی جیت کی خبر کو نمایاں انداز میں شائع کیا ہے۔آسٹریلیا کے متعدد اخبارات اور ویب سائٹس نے بھی اس باپردہ خاتون کی کامیابی کو نمایاں خبر کے طور پر شائع کیا ہے۔

ان کے خاوند ا س کی وجہ یہ بیان کرتے ہیں آسٹریلوی پارلیمان کے بعض ارکان ،جماعتوں اور بعض انتہا پسندوں نے اسلام اور مسلمانوں کے خلاف بھرپور مہم چلائی تھی لیکن وہ اپنے مذموم مقاصد میں کامیاب نہیں ہوسکے تھے۔

خدر نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ کینٹربری ،بنک ٹاؤن میں قریباً ایک لاکھ دس ہزار مسلمان رہ رہے ہیں اور ان کی تعداد آسٹریلیا کی ریاست تسمانیہ کی کل آبادی سے بھی زیادہ ہے۔ان کے بہ قول ان کی اہلیہ کی جیت آسٹریلوی عوام میں شعور کی بیداری اور اسلامو فوبیا کی مذمت کا مظہرہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں