ایران ’شریف اور معزز‘ملک ہے تو قطر کومبارک ہو: سعودیہ

عرب لیگ کے اجلاس میں ایران کو ’معزز‘ کہنے پر کشیدگی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

قطر کے وزیر مملکت برائے خارجہ امور سلطان بن سعد المریخی کی جانب سے ایران کو ’شریف‘ اور معزز ملک قرار دینے پر سعودی عرب نے سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق گذشتہ روز عرب لیگ کے وزراء خارجہ کے اجلاس کا مصر میں آغاز پر سکون انداز میں ہوا مگر اجلاس کے دوران قطری وزیر مملکت برائے خارجہ امور سلطان بن سعد المریخی نے بائیکاٹ کرنے والے چار عرب ممالک کو اشتعال دلانے کے لیے ایران کی حمایت کا کھل کر اظہار کیا۔

قطر کے ایران کے ساتھ تعلقات کو سند جواز فراہم کرنے کے لیے المریخی نے کہا کہ ایران ایک ’معزز اور شریف ملک ہے‘۔

المریخی نے یہ بات عرب لیگ کے وزراء خارجہ اجلاس میں سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، مصر اور بحرین کے مندوبین کو مخاطب کرتے ہوئے کی۔

خیال رہےکہ یہ چاروں ممالک جون سے قطر کا یہ کہہ کر بائیکاٹ جاری رکھے ہوئے ہیں کہ دوحہ دہشت گردوں کی معاونت کے ساتھ ساتھ عرب ممالک کے اندرونی امور میں مداخلت کا مرتکب ہے۔

قطری وزیر مملکت کی طرف سے ایران کو معزز ملک قرار دینے پر مصر میں متعین سعودی سفیر اور عرب لیگ میں مملکت کے مستقل مندوب احمد قطان نے کہا کہ اگر ایران جیسا مجرم مملک بھی شریف اور معزز ہے تو پھر قطر کو مبارک ہو۔

انہوں نے کہا کہ آج قطر ایران کو معزز ملک قرار دیتا ہے مگر اسے بہت جلد یہ احساس ہوگا کہ تہران کے ساتھ تعلقات کا قیام بہت بڑی غلطی تھی کیونکہ ایران ہمیشہ خلیجی ملکوں کے خلاف سازشیں کرتا رہا ہے۔

احمد قطان نے کہا کہ قطری مندوب کہتے ہیں کہ ایران ایک معزز ملک ہے۔ واللہ اس سے بڑا مذاق اور کوئی نہیں ہوسکتا۔ ایران نے ہمیشہ خلیجی ملکوں کے خلاف سازشیں کیں۔ ایک ایسا ملک جس کے کارندے بحرین اور کویت میں جاسوسی کرتے ہیں وہ قطر کے لیے شریف اور معزز ہوگیا۔ یہ وہی ایران ہےجس نے تہران میں سعودی سفارت خانے کو نذرآتش کیا تھا۔ مگر افسوس ہے کہ قطری وزیر مملکت ایران کو ’شریف‘ ملک قرار دیتے ہیں۔

سعودی سفیر نے قطری وزیر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ایران تمہیں مبارک ہو۔ بہت جلد آپ کو ایران کے ساتھ راہ و رسم بڑھانے پر شرمندگی اٹھانا پڑے گی۔

اس موقع پر مصری وزیرخارجہ سامح شکری نے بھی قطری وزیر مملکت کے ایران کی حمایت پر مبنی بیان کی شدید مذمت کی۔ انہوں نے کہا کہ عرب لیگ کے اجلاس کے دوران تنازعات کو اچھالنے کا طرز عمل قابل قبول نہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں