ملائیشین وزیراعظم اور ٹرمپ میں دہشت گردی کے امور پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ملائیشیا کے وزیراعظم نجیب رزاق نے گذشتہ روز واشنگٹن میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کی۔ اس ملاقات میں دونوں ہ نماؤں کے درمیان دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ، عالمی تنازعات اور دو طرفہ تجارت کو فروغ دینے سمیت باہمی دلچسپی کے دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق صدر ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں ملیشیا کے وزیر اعظم نجیب رزاق کا خیر مقدم کرتے ہوئے اپنے ملک میں سرمایہ کاری کرنے اور دہشت گردی کے خلاف لڑنے کی کوششوں کو سراہا۔

صدر ٹرمپ نے منگل کے روز کہا کہ وہ اور انڈونیشیا کے وزیر اعظم نجیب بہت بڑے تجارتي معاہدوں پر کام کررہے ہیں جن میں 10 ارب سے 20 ارب ڈالر مالیت کے بوئنگ طیارے اور جنرل الیکٹرک جیٹ انجن شامل ہیں۔

وزیر اعظم نجیب نے تصدیق کی کہ پانچ سال کی مدت میں اس معاہدے کی مالیت 10 ارب ڈالر سے بڑھ جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ یہ طیارے سرکاری کمپنی ملائیشیا ایئر لائنز میں شامل کیے جائیں گے۔ انہوں نے یقین دلایا کہ ملائیشیا دہشت گردی کے خلاف جنگ میں امریکا کے ساتھ بھرپور تعاون جاری رکھے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے 737 قسم کے 25 اور 787 ماڈل کے 8 طیاروں کے سودے کیے ہیں جب کہ 737 ماڈل کے مزید 25 طیارے خریدے جا سکتے ہیں۔

ملائیشیا کے وزیر اعظم نے کہا ملک کے پنشن فنڈ کے 7 ارب ڈالر سے پہلے ہی امریکہ میں سرمایہ کاری کی جا چکی ہے جب کہ مزید تین سے چار ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کا منصوبہ ہے۔

نجیب رزاق نے کہا ہے کہ ان کا ملک داعش اور القاعدہ جیسے دہشت گرد گروپس کے خلاف لڑنے کے لیے پر عزم ہے اور یہ کہ دہشت گرد امریکہ اور ملائیشیا دونوں کے دشمن ہیں۔ہم دنیا کے اس حصے کو دہشت گردوں سے محفوظ رکھنے کے لیے ہر ممکن اقدامات کریں گے۔

انہوں نے صدر ٹرمپ پر زور دیا کہ وہ اعتدال اور ترقی پسند مسلم حکومتوں کی مدد کے لیے اسلامی دنیا کے عوام کے دل اور ذہن جیتنے کی کوشش کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ اسلام کا حقیقی چہرہ آپ ملائیشیا میں دیکھ سکتے ہیں۔

وزیراعظم نجیب رزاق نے کہا کہ امریکا کا دشمن ملائیشیا کا دشمن ہے۔ دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف ملائیشیا امریکا کے ساتھ مل کر کام کرتا رہے گا۔

خیال رہے کہ ملائیشیا کا شمار جنوب مشرقی ایشیائی ممالک میں امریکا کے اہم اتحادیوں میں ہوتا ہے۔ توقع ہے کہ رواں سال کے آخیر تک صدر ٹرمپ بھی ملائیشیا کا دورہ کریں گے۔ متوقع طور پر وہ جنوب مشرقی ایشیائی ریاستوں کے دورے کے دوران فلپائن اور ویتنام بھی جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں