.

امریکا : ریاست واشنگٹن میں ہائی اسکول میں فائرنگ ، ایک طالب علم ہلاک ، تین زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کی ریاست واشنگٹن میں ایک ہائی اسکول میں مسلح طالب علم نے اپنے ہم جماعتوں پر فائرنگ کردی ہے جس کے نتیجے میں ایک طالب علم ہلاک اور تین زخمی ہوگئے ہیں۔

بدھ کے روز فائرنگ کا یہ واقعہ ایک چھوٹے قصبے راک فورڈ میں واقع فری مین ہائی اسکول میں پیش آیا ہے۔یہ سپوکین کاؤنٹی سے پچیس میل جنوب مشرق میں واقع ہے۔سپوکین کے محکمہ آگ ( فائر ڈیپارٹمنٹ ) نے اس واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ تینوں زخمی طلبہ کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔وہ شدید زخمی ہیں لیکن ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی گئی ہے۔

سپوکین کاؤنٹی کے شیرف اوزئی کینزووچ نے کہا ہے کہ فائرنگ کرنے والے مسلح طالب علم کو حراست میں لے لیا گیا ہے لیکن انھوں نے اس کی شناخت نہیں بتائی ہے۔البتہ اسکول کے طلبہ نے اس کا نام کالب شارپ بتایا ہے اور وہ اپنے بیگ میں گن چھپا کر لایا تھا اور اسی سے اس نے اپنے ساتھی طلبہ پر فائرنگ کی تھی۔

اس واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس کی بھاری نفری اسکول میں پہنچ گئی اور اس نے صورت حال پر قابو پالیا ۔بچوں کے والدین دیوانہ وار اسکول کی جانب آنا شروع ہوگئے جس کی وجہ سے اس قصبے کی واحد سڑک پر گاڑیوں کا رش لگ گیا۔

بعض بچوں نے خود فون کرکے اپنے والدین کو فائرنگ کے اس واقعے کی اطلاع دی تھی اور وہ گھبرائے ہوئے تھے۔اسکول کی انتظامیہ نے بھی ایس ایم ایس کے ذریعے واقعے کے بارے میں والدین کو مطلع کیا اور انھیں بتایا کہ ان کے بچے محفوظ ہیں۔

واشنگٹن کے گورنر جے انسلی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ’’ ریاست کے تمام مکین مقتول اور زخمی بچوں کے خاندانوں کے ساتھ ہیں اور وہ اسکول کے عملہ کی کارکردگی پر بہت شکر گزار ہیں‘‘۔