.

قطر: آل مرہ قبیلے کے سردار نے خاندان کی شہریت منسوخی کی تصدیق کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

قطر کے آل مُرّہ قبیلے کے سردار شیخ طالب بن لاہوم بن شریم نے اپنے علاوہ خاندان کے چوّن افراد کی قطری شہریت منسوخ ہونے کی تصدیق کردی ہے۔انھوں نے دوحہ حکومت کو ایرا ن کے ساتھ راہ ورسم بڑھانے پر خبردار کیا ہے۔

شیخ طالب نے العربیہ نیوز کے ساتھ ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ انھیں قطری حکام کے اس اقدام پر کوئی حیرت نہیں ہوئی ہے۔

انھوں نے کہا کہ’’ قطری حکام دہشت گردوں کو محفوظ پناہ گاہیں مہیا کرنے اور ان کی پشتیبانی کا ایک ذریعہ بن چکے ہیں اور یہ موضوع ان کے خاندان کی قومیت ختم کیے جانے سے کہیں زیادہ لائق توجہ اور قابلِ غور ہے۔یہ سعودی عرب اور خلیجی ریاستوں پر ایک بڑا حملہ ہے‘‘۔

سعودی عرب کی قومی سوسائٹی برائے انسانی حقوق نے بتایا ہے کہ قطر نے شیخ طالب کے خاندان کے چوّن افراد کی شہریت منسوخ کردی ہے۔ آل مرہ کے ان ارکان کا شیخ طالب سے براہ راست تعلق ہے۔ان میں اٹھارہ خواتین اور ان کے بچے بھی شامل ہیں۔

سوسائٹی نے العربیہ کے لیے جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ (قطری حکومت کا) یہ اقدام انسانی حقوق کے تمام اصولوں کی صریح خلاف ورزی ہے۔اس نے آل مرہ کے افراد کو دربدر کردیا ہے۔قطری حکومت نے قبل ازیں 2005ء میں ایک ایسے ہی اقدام کے ذریعے چھے ہزار سے زیادہ قطریوں کی بلا جواز شہریت منسوخ کردی تھی اور یہ فیصلہ کرتے ہوئے کسی بین الاقوامی قانون یا قدر کا کوئی خیال نہیں رکھا تھا‘‘۔