.

حوثی لیڈر کی پڑوسی ملکوں پر میزائل حملوں کی دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں ایران کے پالتو حوثی شدت پسند گروپ کے سربراہ عبدالملک الحوثی نے دھمکی دی ہے کہ الحدیدہ بندرگاہ کی طرف یمن کی آئینی حکومت یا عرب اتحاد نے بڑھنے کی کوشش کی تو سمندر میں موجود تیل بردار جہازوں اور پڑوسی ملکوں کو میزائل حملوں کا نشانہ بنایا جاسکتا ہے۔

’العربیہ‘ کے مطابق باغیوں کے ٹی وی چینل پر نشر کردہ ایک بیان میں حوثی لیڈر کا کہنا تھا کہ اگرالحدیدہ بندرگاہ پر ان کے مفادات کو خطرہ لاحق ہوا تو وہ حریف ممالک کے اندر اور سمندر میں موجود ان کے تیل بردار جہازوں کو میزائلوں سے نشانہ بنائیں گے۔

حوثی لیڈر کا کہنا تھا کہ آج کے روز میزائل طاقت کی بنیاد اور اس کے راستوں کا تعین کردیا گیا ہے۔ جلد ہی درمیانے فاصلے تک مار کرنے والے میزائلوں کی بھاری تعداد تیار کرلی جائے گی جب کہ طویل فاصلے تک مار کرنے والے میزائلوں کی تیاری اور اس میں کامیابی بھی جلد ملنے والی ہے۔

یمن کے حوثی لیڈر نے بغاوت میں ساتھ دینے والے سابق مںحرف صدر علی عبداللہ صالح کو بھی سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں۔ انہوں نے کہا کہ بیرونی اشاروں پر کام کرنے والے نام نہاد دوستوں کو بھی اپنی بددیانتی کا خمیازہ بھگتنا ہوگا۔ انہوں نے علی صالح اور اس کے وفاداروں پر بد دیانتی کے ارتکاب کا الزام عاید کیا۔