.

’وال اسٹریٹ‘ میں ڈگری کے بغیر سات لاکھ ڈالر کی ملازمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کیا آپ کبھی یہ سوچ سکتے ہیں کہ اعلیٰ تعلیمی اسناد کےبغیر آپ کو ایک ایسی ملازمت ملے جس کے بدلے میں آپ کوسال بھر میں سات لاکھ امریکی ڈالر ادا کیے جائیں، یعنی پاکستان سات کروڑ روپے سے زاید کی رقم ملےتوآپ ایسی کسی ملازمت پر یقین نہیں کریں گے۔ مگر امریکا میں ’وال اسٹریٹ‘ نے ایک ایسی نوکری کا اشتہار دیا ہے جس میں کسی ڈگری کی ضرورت نہیں۔

خیال رہے کہ امریکا میں مالیاتی مارکیٹوں اور مجموعی مالیاتی اداروں کے لیے بھی "وال اسٹریٹ" کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق وال اسٹریٹ کے کوری ڈور میں لگتا ہے کہ مالیاتی سائنس میں سرٹیفکیٹ چمکدار کلید کی کوئی زیادہ حیثیت نہیں۔ اب آپ کو حساب کے کسی ایسے سرٹیفکیٹ کی ضرورت نہیں جس مں آپ کو سولوشن ڈویلپ کرنے اور حسابی مساواتوں جیسا کہ فاسٹ ڈیٹا کا تجزیہ کرنے کی مغز ماری کی ضرورت نہیں جس میں تاجروں کو بغیر کسی مداخلت کے خریدو فروخت کے فیصلے کرنے کا اختیار ہوتا ہے۔

اس لیے مالیاتی سیکٹر میں اب کسی ڈگری کی ضرورت کم ہی رہی ہے۔

’Quants‘ کا شمارحسابی نظام کی ایپلیکشن کے اینلسٹک ماہرین میں ہوتا ہے جو حسابی مساواتوں میں فینانشیل مسائل اور انتظامی خطرات کے حل میں مدد دیتے ہیں۔

Hedge Fund یا نقصانات سے بچاؤ کے لیے مختص رقوم کے حساب کتاب کا انحصار ماہرین کے تخمینی تجزیوں کے بجائے ریاضیاتی مساواتوں اور حسابی منہج پر ہوتا ہے۔ امریکا میں ہیج فنڈ امریکی شیئرز کی ٹریڈنگ میں 27 فی صد ذمہ دار سمجھا جاتا ہے۔ Tabb Group کے مطابق سنہ 2013ء میں اس میں 14 فی صد اضافہ دیکھنے میں آیا۔

سال کے پہلے چار ماہ میں یہ فنڈ 9 کھرب 32 ارب ڈالرکی سرمایہ کاری کا ذمہ دار تھا۔ HFR Inc کے مطابق یہ رقم ’ہیج فنڈ‘ کی اصل رقم سے 30 فی صد زیادہ ہے۔

مگر سوال یہ ہے کہ Quant Funds کے فیصلوں کی کامیابی اور فعالیت کیسے ہوسکتی ہے؟َ۔

اعدادو شمار سے ان سوالوں کے جوابات کی وضاحت با آسانی ہوجاتی ہے۔ مثال کے طور پر متوسط ’Quant fund‘ کی اوسط آمدن سال کے پہلے چار ماہ میں 5 فی صد سے زیادہ ہے تو ‘ہیومن گورننس‘ میں اس کی آمدن 4.3 فی صد سے زیادہ نہیں ہوگی۔