سعودی عرب : 50 سے زیادہ بڑی عالمی فرموں کو کاروبار کے اجازت ناموں کا اجراء

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی وزارت تجارت اور سرمایہ کاری نے گذشتہ نو ماہ کے دوران میں پچاس سے زیادہ بڑی عالمی کمپنیوں اور فرموں کو مملکت میں کاروبار کے لیے لائسنس جاری کردیے ہیں۔

سعودی وزیر برائے تجارت اور سرمایہ کاری ماجد القصبی نے نیویارک میں گلوبل بزنس فورم کے موقع پر العربیہ نیوز چینل سے ایک خصوصی انٹرویو میں بتایا ہے کہ جن کمپنیوں کو کام کے اجازت نامے جاری کیے گیے ہیں،ان میں 23 امریکی ہیں اور ان میں ایچ پی اور بوئنگ بھی شامل ہیں۔

انھوں نے بتایا ہے کہ آیندہ دو ہفتوں میں وزارت تجارت اور سرمایہ کاری چھے مزید کمپنیوں کو سعودی عرب میں کام کے اجازت نامے جاری کردے گی۔ان میں سے دو کمپنیاں ٹیکنالوجی کے شعبے میں کام کرتی ہیں، تین آپریشنز اور مرمت کا کام کرتی ہیں اور ایک دواساز کمپنی ہے۔

انھوں نے کہا کہ سعودی عرب نجی شعبے کی شراکت بڑھانے اور غیرملکی سرمایہ کاری کو راغب کرنے کی کوششوں کے ضمن میں بنک دیوالیہ کے ایک قانون اور تجارتی قرضوں کے نظام سمیت مختلف قوانین نافذ کرنے کے لیے اقدامات کررہی ہے۔

سعودی وزیر نے بتایا ہے کہ بنک دیوالیہ قانون منظوری کے لیے شوریٰ کونسل کو بھیج دیا گیا ہے اور ہمیں امید ہے کہ اس پر 2018ء کی پہلی سہ ماہی میں عمل درآمد کا آغاز ہوجائے گا۔تجارتی قرضوں کے نظام سے متعلق قانون کو بھی دو سے تین ہفتوں میں شوریٰ کونسل کو بھیج دیا جائے گا۔اس کے بعد تجارتی فر نچائز کے نظام کا قانون بھی تیار کرکے منظوری کے لیے بھیجا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں