.

حاکم دبئی اور السیسی کے درمیان علاقائی امور پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصرکے صدر عبدالفتاح السیسی نے گذشتہ روز متحدہ عرب امارات کا خصوصی دورہ کیا۔ اس دورے کے دوران انہوں نے امارات کے نائب صدر، وزیراعظم اور حاکم دبئی الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم سے انتہاپسندی، تعصب اور خطے کی اقوام میں نفرت سے نمٹنے کے عزم پرتفصیلی بات چیت کی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوموار کی شام دبئی میں دونوں رہ نماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور اور دو طرفہ تعلقات کو فروغ دینے پر بات چیت کی گئی۔

حاکم دبئی نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان برادرانہ تعلقات ہی دونوں قوموں کو ایک دوسرے سے جوڑے ہوئے ہیں۔ انہوں نے عرب مالک کے مفادات، عرب اقوام میں قومی سلامتی اور خطے میں دیر پا قیام امن کی مساعی کے حوالے سے مصر کی خدمات کو سراہا۔

الشیخ محمد بن راشد نے مصر میں اقتصادی شعبے میں ترقی،عوامی سروسز کی صورت حال میں بہتری اور مصر کے شہروں اور گورنریوں میں عوام کو باعزت زندگی گذارنے کے لیے قاہرہ حکومت کی طرف سے فراہم کی گئی خدمات کو سراہا۔

دونوں رہ نماؤں نے دہشت گردی اور انتہا پسندی سے نمٹنے کے لیے متحدہ عرب امارت، سعودی عرب، مصر اور بحرین کے مشترکہ لائحہ عمل کو آگے بڑھانے، بھائی چارے اور رواداری کے فروغ، خطے کو دہشت گردی، انتہا پسند اور نفرت پر مبنی فرقہ واریت کی لعنت سے پاک کرنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

اس موقع پر صدر السیسی نے اپنے دورہ امارات کو خوشی اور مسرت کا اظہار کیا اور کہا کہ انہیں دبئی اور امارات کی اقتصادی اور سماجی شعبوں میں حالیہ برسوں کے دوران ہونے والی ترقی پر خوشی ہے۔ متحدہ عرب امارات کی ترقی خطے کے دوسرے ممالک کی ترقی اور خوش حالی کا ذریعہ ثابت ہوگی۔

مصری ایوان صدر ترجمانم علاء یوسف نے ایک بیان میں بتایا کہ صدر السیسی اور اماراتی قیادت کے درمیان ہونے والی بات چیت میں دو طرفہ دلچسپی کے امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات کے آخری میں الشیخ محمد بن راشد آلمکتوم نے صدر السیسی کو اپنی کتاب کا تحفہ بھی پیش کیا۔