حوثی باغیوں کا ایرانی آپریشنل کمانڈر سعودی سرحد کے قریب ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن کے عسکری ذریعے نے بتایا ہے کہ شدت پسند حوثی باغیوں کی کمان کرنے والا ایک ایرانی عہدیدار سعودی عرب کی سرحد کے قریب فضائی حملے میں متعدد باغیوں سمیت ہلاک ہو گیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمنی فوج کی ترجمان ویب سائٹ نے عسکری ذریعے کے حوالے سے بتایا ہے کہ حوثیوں کے الربوعہ آپریشن کا انچارج ایک غیر ملکی جنگجو صعدہ گورنری کے شمالی علاقے باقم میں ایک فضائی حملے میں ہلاک ہو گیا۔ عرب اتحادی فوج کے طیاروں کے ذریعے کی گئی بمباری کے نتیجے میں کئی دوسرے جنگجو بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ الربوعہ آپریشن چیف کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ ایرانی ہے۔ فضائی حملے میں ایک مقامی شدت پسند کمانڈر ابو الکرار الصعدی اور 10 دوسرے جنگجو بھی ہلاک ہو گئے ہیں۔

عسکری ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحادی فوج کے طیاروں نے سرحدی علاقے’باقم‘ میں بال زمان نامی ایک ایرانی جنگجو کمانڈر کی رہائش گاہ پر بمباری کی جس کے نتیجے میں مکان مکمل طور پر تباہ ہوگیا۔

خیال رہے کہ یمن کی آئینی حکومت اور عرب اتحاد ایران پر حوثی باغیوں کو اسلحہ، رقوم اور افرادی قوت کے ساتھ عسکری ماہرین کی خدمات فراہم کرنے کا الزام عاید کرتے چلے آ رہے ہیں۔ یمنی حکومت اور عرب ممالک کا کہنا ہے کہ ایران حوثی باغیوں کو عسکری تربیت فراہم کرنے کےساتھ انہیں ہتھیار تیار کرنے اور بری اور بحری بارودی سرنگوں کی تیاری کی ٹریننگ دیتا رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں