’’خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت دینے کا فیصلہ دانش مندانہ ہے‘‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی امام محمد ابنِ سعود جامعہ اسلامیہ کے ڈائریکٹر اور کبائر علماء کونسل کے رکن ڈاکٹر سلیمان بن عبداللہ ابا الخیل نے مملکت میں خواتین کو کاریں چلانے کی اجازت دینے سے متعلق شاہی فرمان کا خیرمقدم کیا ہے اور اس کو ایک دانش مندانہ ، درست اور مثبت قدم قرار دیا ہے۔

انھوں نے بدھ کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ نیا شاہی فرمان ایک معقول جواز پر مبنی ہے ۔ان کے بہ قول :’’ یہ شاہی فرمان گہرے اور محتاط غور وخوض کے بعد تیار کیا گیا ہے۔اس ضمن میں مختلف حقائق ، دستاویز ، اعداد وشمار اور سماجی اور اقتصادی امور کا باریک بینی سے جائزہ لیا گیا ہے‘‘۔

ابا الخیل کا کہنا ہے کہ اس شاہی حکم سے مختلف مذہبی ، سماجی ، کرداری اور اخلاقی قباحتوں سے بچا جاسکے گا۔انھوں نے وضاحت کی ہے کہ خواتین کو خود ڈرائیونگ کی اجازت ملنے کے بعد انھیں کسی غیرملکی ڈرائیور کے ساتھ گھروں سے باہر جانے ، آنے کی صورت میں لاحق ممکنہ خطرات سے بھی بچا جاسکے گا کیونکہ خواتین غیرملکی کار ڈرائیوروں کے ساتھ کسی نگرانی یا مواخذے کے بغیر گھر وں سے باہر جاتی آتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں