سعودی سرمایہ کاری فنڈ جدہ میں جدید شہر کے ترقیاتی منصوبے پر کام کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کا سرکاری سرمایہ کاری فنڈ جدہ میں ساحل سمندر پر ایک نیا شہر بسانے کے منصوبے پر کام کرے گا۔اس منصوبے کے تحت رہائشی ، سیاحتی اور تجارتی مراکز تعمیر کیے جائیں گے اور پہلے سے موجود جگہوں اور عمارات کی تزئین و آرائش کی جائے گی۔

اس منصوبے کے تحت آیندہ دس سال کے دوران میں 18 ارب سعودی ریال کی سرمایہ کاری کی جائے گی اور اس سے 36 ہزار ملازمتوں کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔اس منصوبے کا مقصد ایسا امتیازی اور پرکشش ماحول پیدا کرنا ہے جس سے جدہ کو دنیا کے ایک سو بڑے شہروں میں سے ایک بنانا ہے۔

جدہ الجدید کے اس منصوبے میں تفریح گاہیں بنائی جائیں گی، ایسے خریداری اور تجارتی مراکز تعمیر کیے جائیں گے جہاں تک مکینوں اور زائرین دونوں کی بآسان رسائی ہو۔منصوبے کے تحت بارہ ہزار نئے مکانات یا رہائشی یونٹس تعمیر کیے جائیں گے اور وہاں 58 ہزار نئے مکین قیام پذیر ہو سکیں گے۔

یہ شہری منصوبہ پچاس لاکھ مربع میٹر پر محیط ہوگا ۔یہ چھے بڑے حصوں میں تقسیم ہوگا۔ان میں نئے مکانات ، نئے عجائب گھر ،ثقافتی ، سماجی اور کاروباری مراکز ، باغات ، تفریحی پارک ، کھیل گاہیں، ہوٹل اور مہمان نوازی کے مراکز ،دکانیں اور ساحل سمندر پر لوگوں کے لیے سیر گاہیں شامل ہیں۔

جدہ کے اس نئے شہر میں 42 فی صد رقبہ رہائشی علاقے کے لیے مختص ہوگا۔35 فی صد پر تفریح گاہیں اور تجارتی مراکز قائم کیے جائیں گے۔12 فی صد جگہ دفاتر کے لیے مختص ہوگی اور 11 فی صد رقبے پر ہوٹل اور مہمان نوازی کے لیے مراکز تعمیر کیے جائیں گے۔

اس وقت اس منصوبے پر ابتدائی کام جاری ہے اور اس پر 2019ء میں تعمیراتی کام کا آغاز کردیا جائے گا۔یہ منصوبہ سعودی عرب کے ویژن 2030ء کے مطابق وضع کیا گیا ہے۔اس کا مقصد اعلیٰ بین الاقوامی معیار کے مطابق سیاحتی مقامات کی تعمیر ہے اور نجی شعبے کو سرمایہ کاری کے مواقع مہیا کرنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں