.

سعودی عرب میں خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت مل گئی

شاہ سلمان نے خواتین کو ڈرائیونگ کے لئے لائسنس جاری کرنے کا حکم دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے تاریخ ساز فیصلہ کرتے ہوئے ملک میں خواتین پر گاڑی چلانے پرعاید پابندی ختم کرتےہوئے حکم دیا ہے کہ خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت دی جائے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق شاہ سلمان نے ٹریفک قوانین کی پابندی اور اس کے ایگزیکٹو احکامات کو اپنانے کا حکم دیا اور ساتھ ہی کہا ہے کہ ملک میں مردو خواتین سب کو گاڑی چلاںے کی یکساں اجازت دی جائے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں خواتین کے گاڑی چلانے کا معاملہ ایک عرصےسے وجہ نزاع چلا آرہا تھا۔ ملک میں خواتین کو گاڑی چلانے کی قانونی اجازت نہ ہونے کے باعث اکثر خواتین کو گاڑی چلانے کی پاداش میں گرفتار ہونا پڑتا تھا۔

شاہ سلمان کی جانب سے خواتین کی ڈرائیونگ پر عاید پابندی اٹھنے کے بعد وزارت داخلہ، خزانہ، وزارت محنت اور سماجی بہبود پر مشتمل ایک اعلیٰ سطحی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جو خواتین کے گاڑی چلانے کے شاہی فرمان پر عمل درآمد کے انتظامات کو یقینی بنائے گی۔

شاہی فرمان کے بعد یہ کمیٹی تیس روز میں اپنی سفارشات مرتب کرے گی اور اس پر عمل درآمد کے لیے 10/10/1439 تک عمل درآمد شروع کیا جائے گا۔

شاہ سلمان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ خواتین کی ڈرائیونگ کا معاملہ علماء کے ہاں بھی زیربحث رہا ہے اور ضمن میں کسی قسم کی کوئی شرعی ممانعت نہیں۔ بعض وجوہ کی بناء پر علماء اس معاملے میں محتاط انداز میں بات کرتے ہیں، مگر جن وجوہ کی بناء پر خواتین کو اب تک گاڑی چلانے سے روکا گیا تھا ان کے سد باب کے بعد اب کوئی امر مانع نہیں رہا ہے۔ اس لیے متعلقہ حکام کو مردوں کے ساتھ خواتین کو بھی سعودی عرب میں گاڑی چلانے کی اجازت فراہم کیے جانے کے احکامات صادر کیے جاتے ہیں۔