اسرائیلی طیاروں کی اردن کے مسافر طیارے کو گھیرنے کی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

گذشتہ روز اسرائیل کے کئی جنگی طیاروں نے فضائی حدود کے قریب آنے والے اردن کے ایک مسافر بردار طیارے کے گھیراؤ کی کوشش کی تھی تاہم بعد ازاں راستہ بدلنے پر اسرائیلی طیارے واپس آگئے تھے۔

بیت المقدس میں ’العربیہ‘ کے نامہ نگار نے بتایا کہ اسرائیل کے متعدد جنگی طیاروں نے اردن کے ایک مسافر طیارے کو اس وقت گھیرنے کی کوشش کی جب وہ قاہرہ سے عمان جاتے ہوئے اسرائیل کی فضائی حدود کے قریب آگیا تھا۔

اسرائیلی اخبار ’یدیعوت احرونوت‘ کی ویب سائیٹ پر پوسٹ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ فضائیہ کے دو لڑاکا طیاروں نے فضائی حدود میں داخل ہونے والے ایک اردنی مسافر جہاز کو اپنی حدود سے باہر نکال دیا۔

اسرائیلی ذرائع کا کہنا ہے کہ اردن کی ’رائل جورڈن‘ ایئرلائن کا ایک مسافر طیارہ مصر سے اردن جا رہا تھا۔ اس دوران مسافر جہاز اسرائیل کی فضائی حدود کے قریب آگیا جس پر فضائیہ حرکت میں آگئی تھی۔ نشاندہی ہونے پر اردنی ہوائی جہاز کو جانے دیا گیا۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ مسافر جہاز فنی خرابی کے باعث راستہ بھٹک گیا تھا۔ صہیونی حکام کو جب پتا چلا کہ یہ مسافر بردار جہاز ہے تو اسے جانے دیا گیا۔

دوسری جانب اردنی فضائی کمپنی کا کہنا ہے کہ اس کے کسی مسافر جہاز میں نہ تو کوئی فنی خرابی ہوئی اور نہ ہی اسے اسرائیلی طیاروں کی جانب سے روکنے کی کوشش کی گئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں