بیلجیم میں داعش سے وابستہ مراکشی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یورپی ملک بیلجیم کے حکام کا کہنا ہے کہ پولیس نے گذشتہ روز دارالحکومت برسلز سے ایک مشتبہ شدت پسند کو گرفتار کیا ہے جس کا تعلق مراکش سے ہے اور وہ شدت پسند گروپ داعش سے وابستہ ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق برسلز سے گرفتار ہونے والے شدت پسند پر داعش کے لیے نوجوانوں کو بھرتی کرنے اور ملک میں دہشت گردی کی کارروائیوں کی منصوبہ بندی کا الزام عاید کیا گیا ہے۔

بیلجین کے فیڈرل پبلک پراسیکیوٹر جنرل کے ترجمان اریک فان ڈیر سیپٹ نے ’اے ایف پی‘ کو بتایا کہ پولیس نے زافنتم کے مقام پر ایک مکان پر چھاپہ مار مکر ایک مشتبہ شخص کو گرفتار کیا گیا ہے۔ اس کی گرفتاری اسپین کی نشاندہی پر کی گئی ہے۔

گرفتار مشتبہ شدت پسند کی عمر چھبیس سال بتائی گئی تاہم اس کی مزید شناخت ظاہر نہیں کی گئی۔

حکام کا کہنا ہے کہ گرفتار مراکشی شدت پسند سنہ 2014ء سے برسلز میں اپنے گھر اور مختلف کیفی ٹیریاز میں دہشت گردانہ فکر کی ترویج اور لوگوں کو داعش کے لیے بھرتی کی کوششیں کرتا رہا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ گرفتار شدت پسند کا ایک بھائی عراق اورشام میں دہشت گرد تنظیموں کے ساتھ شامل رہا ہے تاہم مذکورہ شخص بیرون ملک نہیں جا سکا۔ اس نے پوری ممالک میں دہشت گردی کی کارروائیوں کی منصوبہ بندی کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں