.

سعودی نوجوان ڈائریکٹر کی کار چلاتی والدہ کے ساتھ سیلفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے نوجوان فلم ہدایت کار ( ڈائریکٹر) فہد الشریف نے اپنی والدہ کے ساتھ کار میں بیٹھے ہوئے ٹویٹر پر ایک سیلفی شئیر کی ہے۔اس کی خاص بات یہ ہے کہ اس میں ان کی والدہ ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھی ہوئی ہیں اور کار چلا رہی ہیں۔

انھوں نے ایک ٹویٹ میں لکھا ہے:’’ میں یہ توقع کرتا ہوں کہ میری والدہ پہلی سعودی خاتون ہوں گی ، جو الراقعی چیک پوائنٹ سے کار چلاتے ہوئے گزری ہیں۔سکیورٹی اہلکاروں کا شکریہ ‘‘۔

ٹویٹر کے بہت سے صارفین نے فہدالشریف کی والد کی سڑک پر کار چلانے کی صلاحیت کو سراہا ہے۔ جس شاہراہ پر وہ کار چلا رہی ہیں ،یہ کویت کے ساتھ واقع سعودی عر ب کے سرحدی علاقے میں واقع ہے۔ واضح رہے کہ فہد الشریف نے ہالی ووڈ سے فلم سازی میں ماسٹر ڈگری حاصل کی تھی۔وہ اپنی فلموں پر متعدد ایوارڈ ز حاصل کرچکے ہیں۔

فہد الشریف نے یہ سیلفی سعودی خواتین کی ڈرائیونگ کی حمایت میں ہیش ٹیگ کے ساتھ ٹویٹر پر پوسٹ کی تھی ۔یہ ہیش ٹیگ منگل کے روز نمایاں رجحان ساز رہا ہے۔بہت صارفین نے سعودی خواتین کے کار چلانے کے حق کی حمایت کی ہے اور لکھا ہے کہ خواتین کو بھی مردوں کے شانہ بشانہ گھر سے باہر روز مرہ کے امور نمٹانے چاہییں۔

سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے گذشتہ منگل کے روز خواتین کو کاریں چلانے کی اجازت دینے سے متعلق فرمان جاری کیا تھا۔اس فرمان کے بعد سعودی عرب میں ایک بڑی سماجی تبدیلی متوقع ہے۔اس سے معاشرے میں خواتین کے حوالے سے پائے جانے والے غیر حقیقی خوف وخدشات ختم ہوں گے جو ایک عرصے سے ترقی کے عمل میں رکاوٹ بنے ہوئے ہیں۔

شاہی فرمان کے مطابق خواتین کو آیندہ سال جون سے کاریں چلانے کی اجازت ہوگی۔انھیں مجاز حکام مرد وں کی طرح ڈرائیونگ لائسنس جاری کریں گے اور ان پر بھی ٹریفک قوانین کا یکساں اطلاق ہوگا۔سعودی عرب میں ایک عرصے سے خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت دینے کے لیےمہم چلائی جارہی تھی ۔ اس شاہی فرمان کا زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے وا لے طبقات ، علماء کرام، ملکی و غیرملکی سیاسی اور سماجی شخصیات نے خیرمقدم کیا ہے۔