.

یمن میں عرب اتحاد کے اقدامات کی ’یو این‘ رپورٹ میں تحسین

شہریوں کے کم سے کم جانی نقصان کی پالیسی کا خیر مقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے مستقل مندوب عبداللہ المعلمی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اقوام متحدہ کی طرف سے جاری کی گئی ایک رپورٹ میں یمن میں عرب اتحاد کی حالیہ کارروائیوں میں کم سے کم جانی نقصان کے اقدامات کی تحسین کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق المعلمی نے کہا کہ اقوام متحدہ کی طرف سے جاری کی گئی رپورٹ میں یمن میں آئینی حکومت کی بحالی کے آپریشن میں سرگرم عرب اتحاد کی طرف سے حملوں میں شہری آبادی کا کم سے کم جانی نقصان یقینی بنانے کے اقدامات کو سراہا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اقوام متحدہ کی رپورٹ میں تسلیم کیا گیا ہے کہ عرب اتحاد کی طرف سے یمن میں باغیوں کی سرکوبی کے لیے جاری آپریشن میں عام شہریوں کے کم سے کم جانی نقصان کے اقدامات کیے گئے ہیں۔ یو این نے عرب اتحاد کی پالیسی اور اقدامات کو سراہتے ہوئے اس پر زور دیا ہے کہ وہ یمن میں جنگ کے دوران شہری آبادی کا تحفظ یقینی بنائے۔

عبداللہ المعلمی نے کہا کہ اقوام متحدہ کی تیار کردہ رپورٹ میں معلومات کے حصول اور ذرائع کےحوالے سے انہیں تحفظات ہیں۔ وہ حقائق کی درستی کے لیے اقوام متحدہ کے عہدیداروں سے مشاورت کریں گے۔

المعلمی کا کہنا ہے کہ یمن میں بچوں کے حقوق کی پامالی میں عرب اتحاد کو پہلی فہرست میں شامل نہیں کیا گیا۔ رپورٹ میں واضح کیا گیا ہے کہ یمن میں بچوں کے حقوق کی سنگین پامالیوں کا ارتکاب حوثی باغیوں کی طرف سے کیا جا رہا ہے۔