.

قطری بی اِن گروپ کا سوئس تفتیش کاروں کو کمپیوٹر ڈیٹا دینے سے انکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

قطری کاروباری شخصیت ناصر الخلیفی کے ملکیتی بی اِن میڈیا گروپ اور پیرس سینٹ جرمین ایف سی نے اپنے پیرس میں واقع دفاتر میں تلاشی کی کارروائی کے دوران سوئس حکام کو کمپیوٹر ڈیٹا دینے سے انکار کردیا ہے۔

یورپی میڈیا ذرائع کے مطابق سوئس حکام سے تعاون نہ کرنے سے ناصر الخلیفی اور ان کے بی اِن میڈیا گروپ کے خلاف میڈیا حقوق کے لیے ناجائز سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے شُبے کو تقویت ملی ہے۔نیشنل فنانشیل آفس ( پی این ایف) نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی اے ایف پی کو بتایا ہے کہ بی اِن اسپورٹس نے تفتیش کاروں سے مکمل تعاون نہیں کیا ہے۔

پی این ایف کے ایک ترجمان نے کہا ہے کہ قطری بی اِن اسپورٹس چینل کے دفتر میں ہفتے کے روز چھاپا مار کارروائی کی گئی تھی اور تحقیقات کاروں نے قطر میں چینل کے سرورز میں موجود ڈیٹا کو منتقل کرنے کی درخواست کی تھی لیکن اس کو مسترد کردیا گیا ہے۔سوئس پراسیکیوٹر جنرل کا دفتر اب قطر سے اس کمپیوٹر ڈیٹا کے حصول کے لیے بین الاقوامی قانو نی نظام سے مدد کی درخواست کرے گا اور اس عمل میں بڑی تاخیر ہوسکتی ہے۔

ناصر الخلیفی اس وقت دوحہ میں قریبی لوگوں سے صلاح مشورہ کر کے اپنے دفاع کی تیاری کررہے ہیں۔ان پر 2026ء اور 2030ء میں ہونے والے فٹ بال عالمی کپ کے میچوں کے ٹیلی ویژن حقوق بھاری رقوم کے عوض آگے بیچنے کا الزام ہے۔

پیرس سینٹ جرمین کلب کے صدر کے ایک قریبی ساتھی کا کہنا ہے کہ جن میڈیا حقوق کی بابت تحقیقات کی جارہی ہے،یہ مشرقِ وسطیٰ اور مغربی زون سے متعلق ہیں اور ان ممالک میں بی اِن میڈیاگروپ کے ساتھ مقابلے میں کوئی اور گروپ شریک نہیں تھا۔اس موقف پر یہ سوال اٹھایا گیا ہے کہ اگر ایسا تھا تو پھر ناصر الخلیفی نے فیفا کے بعض حکام کے ساتھ سمجھوتے کی کیوں کوشش کی تھی۔

دوسری جانب یہ بھی ایک معلوم حقیقت ہے کہ بہت سے سعودی اور اماراتی ٹی وی چینلوں کے علاوہ بین الاقوامی میڈیا ذرائع اس طرح کی بولیوں میں حصہ لیتے چلے آرہے ہیں۔

ناصر الخلیفی کے خلاف چار ممالک میں فٹ بال کی عالمی فیڈریشن (فیفا) کے سابق سیکرٹری جنرل جیروم والک کو لاکھوں ڈالرز رشوت دے کر فٹ بال میچوں کے بیش قیمت میڈیا حقوق حاصل کرنے کے الزام میں تحقیقات کی جارہی ہے۔اطالوی پولیس کے مطابق انھوں نے مبینہ طور پر سردینیا میں واقع 70 لاکھ یورو مالیت کا وِلا جیروم والک کو استعمال کے لیے دیا تھا۔