.

انڈونیشی گول کیپر میچ کے دوران دنیا سے رخصت ہو گیا!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

انڈونیشیا میں صفِ اوّل کے فٹبال کلب Persela Lamongan کا معروف گول کیپر اتوار کے روز Semen Padang کلب کے خلاف میچ کے دوران چوٹ لگنے کے سبب زندگی کی بازی گیا۔

انڈونیشیئن لیگ کے سلسلے میں کھیلے جا رہے میچ کے پہلے ہاف کے ختم ہونے سے قبل پیڈانگ کلب نے پرسیلا کلب کے گول پر حملہ کیا جس کو روکنے کے دوران گول کیپر چیئرل ہدیٰ Choirul Huda مخالف ٹیم کے کھلاڑی کی ٹانگ لگنے سے زخمی ہو گیا۔

اس منظر کی وڈیو کے مطابق ہودا پہلے شدید تکلیف سے کراہتا رہا اور پھر بے ہوش ہو گیا۔ چند سیکنڈوں میں ہی طبّی ٹیم نے ہنگامی امداد فراہم کی تاہم ہودا کی تشویش ناک حالت کے سبب اسے فوری طور پر ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

بعد ازاں ہسپتال میں ہودا کی وفات کی تصدیق کر دی گئی۔ ٹیم کے کوچ نے بتایا کہ اس موقع پر "تمام کھلاڑی میچ ختم کر کے ہسپتال پہنچ گئے"۔ کوچ کے مطابق "ہودا کی موت ہم سب کے لیے بہت بڑا صدمہ ہے"۔

ہسپتال میں ہودا کی دیکھ بھال کرنے والے ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ انڈونیشی گول کیپر کی وفات سر اور گردن میں چوٹ لگنے کے نتیجے میں واقع ہوئی۔