.

امریکی وزیر خارجہ کی سعودی عرب آمد،قطر بحران پر بات چیت کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹیلرسن ہفتے کے روز سعودی عرب پہنچ گئے ہیں۔ان کا حالیہ مہینوں میں خطے کا یہ دوسرا دورہ ہے ۔وہ سعودی قیادت سے قطر کے ساتھ جاری خلیجی ممالک کے بحران کے حل کے لیے بات چیت کریں گے۔

ریکس ٹیلرسن نے اس پہلے جولائی میں سعودی عرب اور قطر کا دورہ کیا تھا لیکن وہ قطر بحران کے حل کے لیے کسی پیش رفت میں ناکام رہے تھے۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے قبل ازیں قطر کو دہشت گردی کی حمایت کے الزام میں الگ تھلگ کرنے کی کوششوں کی حمایت کی تھی لیکن اب وہ بحران کے خاتمے کے لیے مصالحت پر زور دے رہے ہیں اور حال ہی میں انھوں نے بحران کے جلد حل کی پیش گوئی کی تھی۔

تاہم ریکس ٹیلرسن نے سعودی دارالحکومت الریاض میں پہنچنے سے قبل کہا کہ ابھی تک بحران کے حل کے لیے بہت تھوڑی پیش رفت ہوئی ہے۔انھوں نے بلومبرگ سے ایک انٹرویو میں کہا کہ’’ مجھے اس بحران کے جلد کسی وقت حل ہونے کے بارے میں کوئی زیادہ توقعات نہیں وابستہ ہیں‘‘۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ایک بیان کے مطابق ریکس ٹیلرسن سعودی قیادت سے خلیج تنازع کے علاوہ ایران ، یمن میں جاری بحران اور انسدادِ دہشت گردی کے موضوع پر بات چیت کریں گے۔وہ الریاض میں سعودی ، عراقی رابطہ کونسل کے پہلے اجلاس میں بھی شرکت کریں گے۔اس کے بعد وہ بھارت اور پاکستان کے دورے پر روانہ ہو جائیں گے۔