.

الجیزہ حملے کے بعد مصر میں تین ماہ کے لیے ایمر جنسی نافذ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر میں الجیزہ گورنری میں پولیس پر حملے میں بڑے تعداد میں اہلکاروں کی ہلاکتوں کے بعد ملک میں ایک بار پھر تین ماہ کے لیے ایمر جنسی نافذ کر دی گئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق گذشتہ روز مصری پارلیمنٹ نے 12 اکتوبر سے تین ماہ کے لیے ہنگامی حالت کے اعلان کی توثیق کردی جس کے بعد تین ماہ تک مصر میں ہنگامی حالت نافذ رہے گی۔

خیال رہے کہ صدر عبدالفتاح السیسی نے 12 اکتوبر کو تین ماہ کے لیے ایمرجنسی نافذ کرنے کا فرمان جاری کیا گیا۔ مصری کابینہ نے اس بل کی منظوری دینے کے بعد پارلیمنٹ سے منظوری کے لیے صدارتی فرمان ایوان میں پیش کیا تھا۔

مصر کا موجودہ دستور صدر کو کابینہ کی منظوری سے ملک میں زیادہ سے زیادہ تین ماہ کے لیے ہنگامی حالت نافذ کرنے کی اجازت دیتا ہے۔ ایمرجنسی کی مدت میں دو بار تین ماہ کے کے لیےپارلیمنٹ سے توسیع کی جاسکتی ہے۔

گذشتہ روز ایوان میں موجود ارکان کی اکثریت نے ملک میں ایمرجنسی کے نفاذ کی حمایت کی۔

خیال رہے کہ ہفتے کے روز مصری وزارت داخلہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ الجیزہ گورنری میں ایک دہشت گرد گروپ کے ساتھ مقابلے میں 17 پولیس اہلکار اور 15 دہشت گرد ہلاک ہوگئے تھے۔