.

سعودی آرامکو اور العربیہ نیوز چینل میں ثقافتی سمجھوتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی بڑی تیل کمپنی آرامکو اور العربیہ نیوز چینل کے درمیان مملکت کی مقامی ثقافت کو اجاگر کرنے اور اس کے فروغ کے لیے ایک سمجھوتا طے پا گیا ہے۔

اس سمجھوتے پر آرامکو کے دہران میں واقع ہیڈکوارٹرز میں العربیہ نیوز چینل کے جنرل مینجر ترکی الدخیل اور آرامکو کے نائب صدر ناصر النفیسی نے دستخط کیے ہیں۔اس کے تحت العربیہ نیوز چینل آرامکو کے دوماہی عربی مجلے قافلہ کے مواد سے استفادہ کرسکے گا۔وہ اس مجلے کے گذشتہ شماروں سےبھی اپنی خصوصی رپورٹس کے لیے مواد اخذ کرسکے گا۔

العربیہ نیوز چینل قافلہ کی سعودی ثقافت کو اجاگر کرنے کے لیے دستاویزی فلموں ، تصاویر اور سوشل میڈیا کے پروگراموں کے تیار شدہ مواد کو بھی استعمال کرسکے گا۔

ناصر النفیسی نے اس موقع پر کہاکہ ’’ یہ سمجھوتا العربیہ ایسے ممتاز ٹیلی ویژن چینل کے ساتھ تعاون کے فروغ کے لیے ایک اہم قدم ہے۔ العربیہ کی آن لائن ویب سائٹ بھی ٹھوس میڈیا ذرائع میں سے ایک ہے اور یہ بالخصوص نوجوانوں میں بہت مقبول ہے‘‘۔

انھوں نے مزید کہا کہ اس سمجھوتے سے کمپنی کے بڑے منصوبوں کو اجاگر کرنے میں مدد ملے گی ۔ اس کے علاوہ اس سے آرامکو کے سماج، ثقافت اور ماحول سے متعلق منصوبوں کو بھی اجاگر کیا جاسکے گا۔

ترکی الدخیل نے بھی اس سمجھوتے کو سراہتے ہوئے اس کو تعاون کی ایک ایسی شکل قرار دیا ہے جس کی وجہ سے عرب مواد کو بہتر انداز میں پیش کیا جاسکے گا اور اس سے ایسا خصوصی مواد سامنے آئے گا جو تمام سطحوں کے عربوں کے لیے مناسب ہوگا۔

انھوں نے کہا کہ آرامکو کا یہ اقدام اس کی عرب ثقافت کی خدمت کا مظہر ہے اور معاشرے میں تعلیم کے فروغ کے لیے کردار کا حصہ ہے۔