.

الریاض: جعلی خوشبویات کی تیاری میں انسانی پیشاب کا استعمال؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت تجارت وسرمایہ کاری نے ایک غیر قانونی لیب پر چھاپہ مار کر مشہور بین الاقوامی برانڈز والے جعلی پرفیومز کا پتہ لگا لیا۔ ان خوشبویات کی تیاری میں انسانی پیشاب بھی استعمال کیا جا رہا تھا۔

وزارت تجارت نے سوشل میڈیا پر گردش کرنیوالی ایک ویڈیو کلپ کے بعد لیب پر چھاپا مارا جس میں پرفیومز کے ڈبوں کے قریب پیشاب سے بھری ہوئی چھوٹی بوتل نظر آ رہی تھی۔ لیب دارلحکومت ریاض کے التعمیر بازار میں واقع ہے۔

ویڈیو کلپ میں نقلی اور ملاوٹی خوشبویات سے بھرے ہوئے دسیوں کارٹن بھی نظر آ رہے تھے۔ ویڈیو کلپ تیار کرنیوالے نے توجہ دلائی تھی کہ مذکورہ لیب میں نہ صرف یہ کہ عالمی مارکوں والی خوشبویات میں ملاوٹ کی جا رہی ہے بلکہ مقامی شہریوں کی زندگی کو خطرات میں ڈالنے والی سرگرمیاں بھی ہو رہی ہیں۔