.

ناقابلِ یقین: یہ تمام گاڑیاں ٹرمپ کی ہم رکاب ہوتی ہیں !

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ان دونوں ایشیا کے سرکاری دورے پر ہیں جو 12 روز تک جاری رہے گا۔ یہ رواں سال جنوری میں صدارت سنبھالنے کے بعد ان کا اب تک کا طویل ترین دورہ ہے۔ اپنے دورے میں ٹرمپ کئی ممالک جائیں گے جن میں جاپان، جنوبی کوریا، چین، ویتنام اور فلپائن شامل ہیں۔

حیرت انگیز بات یہ ہے کہ ٹرمپ کی صدارتی گاڑیوں کا پورا بیڑہ دورے میں ان کے ہمراہ ہو گا۔ ان میں صدر کی مرکزی اور مشہور ترین گاڑی "the Beast" بھی شامل ہے۔ یہ طاقت ور ترین گاڑی صدر کی ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقلی اور ان کو خفیہ خدمات فراہم کرنے کے لیے ہتھیاروں اور حفاظتی اقدامات سے لیس ہے۔

امریکی صدر کی گاڑیوں کے پورے بیڑے کو ایک ضخیم فوی طیارے گلوب ماسٹرC-17 میں امریکا سے منتقل کیا گیا ہے۔ امریکی سیکرٹ سروس نے ہفتے کے روز ٹوئیٹر پر دو تصاویر جاری کی ہیں جن میں یہ گاڑیاں طیارے کے اندر موجود نظر آ رہی ہیں۔ ان گاڑیوں میں صدارتی "کیڈلک" لیموزین )دِی بِیسٹ( کے علاوہChevrolet کمپنی کی فور وہیل ڈرائیو بکتربند Suburban شامل ہے۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے ایشیا کے دورے کا آغاز 3 نومبر کو چین اور جاپان میں ٹھہرنے کے ساتھ کیا تھا۔

خصوصیات

صدر کے لیے خاص طور پر ڈیزائن کی جانے والی گاڑی "دی بِیسٹ".. بیلسٹک ، دھماکا خیز مواد اور گولہ بارود اور کیمیائی حملوں کے خلاف بکتربند کا کردار ادا کرتی ہے۔ اس کے علاوہ گاڑی میں جدید ترین رابطوں کے آلات اور طبّی لوازمات فراہم کیے گئے ہیں۔ امریکی گاڑیوں کی کمپنی جنرل موٹرز نے مذکورہ گاڑی تیار کرنے کے واسطے 1.6 کروڑ امریکی ڈالر کا معاہدہ کیا تھا۔ رواں برس جنوری میں مںظر عام پر لائے جانے سے قبل ہی اس گاڑی کی تصاویر اِفشا ہو کر پھیل چکی تھیں۔

صدارتی بیڑے میں "دی بِیسٹ" گاڑی کو 20 جنوری 2009 کو شامل کیا گیا۔ خیال کیا جاتا ہے کہ وہائٹ ہاؤس کی سیکرٹ سروس کے پاس اب تک اس نوعیت کی 12 گاڑیاں ہیں۔ اگرچہ مذکورہ گاڑی کے بارے میں درست معلومات کی دستیابی کی قلت ہے تاہم ماہرین کی قیاس آرائیوں کے مطابق اس کا وزن 15 سے 20 ہزار پاؤنڈ کے درمیان ہے۔ اس وزن کے پیشِ نظر اس کی رفتار کا اندازہ 60 میل فی گھنٹہ لگایا جاتا ہے۔ اس رفتار کے ساتھ ایندھن کی بچت بھی ہوتی ہے اور فی گیلن 4 سے 8 میل کا سفر طے ہو جاتا ہے۔