.

امریکا : مِس اسرائیل کی مِس عراق کے ساتھ "سیلفی"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل کی 20 سالہ ملکہ حسن Adar Gandelsman نے منگل کے روز اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر ایک غیر معمولی نوعیت کی سیلفی پوسٹ کی جس کو 2582 فالوورز نے پسند کیا جب کہ خیرمقدم اور غصے پر مبنی درجنوں تبصرے بھی سامنے آئے۔ سیلفی میں مِس اسرائیل آدار 27 سالہ مِس عراق سارہ عیدان کے ساتھ اُس کے کندھے پر ہاتھ رکھے نظر آ رہی ہے۔

عراقی دارالحکومت بغداد میں جنم لینے والی عیدان کا تعلق بابِل صوبے کے شہر "حِلّہ" سے ہے۔ وہ موسیقار اور گلوکار ہونے کے علاوہ گانے بھی لکھتی ہے۔ عیدان پرفارمنگ آرٹس میں ڈگری کی حامل ہے۔ اس نے 2009 میں بغداد میں اتحادی افواج کے ساتھ کام بھی کیا اور پھر امریکا چلی گئی۔ سال 2016 میں اس نے مِشی گن ریاست میں ہونے والے عراق کی ملکہ حسن کے مقابلے میں کامیابی حاصل کی۔ بعد ازاں عراق کے مِس یونی ورس کا مقابلہ جیتنے والی فیان السلیمانی کی جانب سے مقابلے کے اصول کی خلاف ورزی کے انکشاف پر یہ تاج بھی سارہ عیدان کے سر پر سجا دیا گیا۔ عیدان 45 برس کے بعد مس یونیورس کے عالمی مقابلے میں عراق کی نمائندگی کر رہی ہیں٫ آخری مرتبہ 1972 میں اس مقابلے میں عراق کی جانب سے وجدان سلیمان نے شرکت کی تھی۔

اسرائیلی ملکہ حسن آدار گینڈلسمین کا تعلق عسقلان سے ہے۔ وہ رواں ماہ مئی تک اسرائیلی فوج میں بھرتی خواتین اہل کاروں میں شامل تھی۔ انسٹاگرام پر پوسٹ کی گئی مِس عراق کے ساتھ اپنی تصویر کے ایک جانب آدار نے لکھا ہے کہ "عراق کی ملکہ حسن.. وہ یقینا شان دار ہے"۔

سارہ عیدان نے اس تصویر کا جواب انسٹاگرام پر ہی اپنے اکاؤنٹ پر ایک دوسری تصویر پوسٹ کر کے دیا جس میں وہ مِس لبنان اور مِس عراق کے ہمراہ نظر آ رہی ہے۔ یہ دونوں خواتین بھی 26 نومبر کو "پلانیٹ ہالی وُڈ لاس ویگاس" ہوٹل میں منعقد ہونے والے مِس یونی ورس مقابلے میں شرکت کریں گی۔ ایونٹ میں 93 ممالک کی حسیناؤں کے درمیان مقابلہ ہو گا۔

سارہ عیدان نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر اسرائیلی ملکہ حسن کے ساتھ اپنی تصویر پوسٹ کرنے کے جواز بھی پیش کیے ہیں۔ عیدان کے مطابق انہوں نے آدار کے ساتھ تصویر صرف یہ پیغام پہنچانے کے لیے بنوائی کہ فلسطین میں امن دیکھنا چاہتے ہیں۔