.

ایران نے خطے میں فرانس کے متوازن مؤقف کا غلط مفہوم اخذ کیا: صدر ماکروں

ایران اپنے بیلسٹک میزائلوں کے پروگرام سے متعلق حکمتِ عملی کی وضاحت کرے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی صدر عمانو ایل ماکروں نے کہا ہے کہ ایران نے خطے میں فرانس کے ’’ متوازن‘‘ مؤقف کا غلط مطلب سمجھا ہے۔فرانس سنی اور شیعوں میں سے کسی کی طرف داری نہیں کرتا ہے ۔ان کا کہنا ہے کہ ایران کو خطے کے امور میں کم جارح ہونا چاہیے۔

انھوں نے جمعہ کو سویڈن کے شہر گوتھن برگ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایران کو اپنے بیلسٹک میزائلوں کے پروگرام سے متعلق حکمتِ عملی کی وضاحت کرنی چاہیے۔

انھوں نے یہ بھی کہا تھا کہ’’ وہ سعد الحریری کا پیرس میں لبنان کے وزیراعظم کی حیثیت سے خیر مقدم کریں گے اور توقع کرتے ہیں وہ آیندہ دنوں ، ہفتوں میں بیروت لوٹ جائیں گے‘‘۔

ان کے اس بیان کے بعد ہفتے کی صبح سعد حریری سعود ی عرب سے فرانس کے دارالحکومت پیرس پہنچ چکے ہیں۔ انھوں نے اپنی آمد کے بعد لبنانی صدر مشعل عون کو فون کیا ہے اور انھیں بتایا ہے کہ وہ آیندہ بدھ کو بیروت لوٹ آئیں گے۔