.

سعودی عرب : کیا خواتین کو ٹریفک کی بعض خلاف ورزیوں پر استثنا حاصل ہوگا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں خواتین کی ڈرائیونگ سے متعلق قواعد وضوابط وضع کرنے والے حکام ایک ایسی تجویز پر بھی غور کررہے ہیں جس میں یہ کہا گیا ہے کہ خواتین کو ٹریفک قوانین کی بعض خلاف ورزیوں پر استثنا دے دیا جائے اور ان پر صرف جرمانہ وغیرہ عاید کرکے معاملے کو موقع پر ہی نمٹا دیا جائے۔

باخبر ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹریفک قواعد وضوابط کی خلاف ورزیوں پر نافذ العمل بعض سزائیں خواتین کے لیے مناسب نہیں ہیں۔بعض قدغنوں کی خلاف ورزی پر ایک گاڑی کے ڈرائیور کو روک کر اس سے پوچھ تاچھ کی جاسکتی ہے اور بعض صورتوں میں حکام گاڑی کو پکڑ کر بند بھی کرسکتے ہیں۔

اخبار الوطن میں شائع شدہ ایک رپورٹ کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ اس تجویز میں یہ سفارش کی جائے گی کہ خواتین کی گاڑیوں کو ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی پر پکڑا یا روکا نہ جائے اور ان پر محض جرمانہ عاید کرنے پر ہی اکتفا کیا جائے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ تجویز سعودی معاشرے کی رسوم اور روایات کے مطابق پیش کی گئی ہے۔اس کا مقصد خواتین کے کاریں چلانے کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنا ہے اور اس ضمن میں آیندہ ہفتے تمام تفصیل کی ایک نیوز کانفرنس میں وضاحت کردی جائے گی۔