.

کنگھی، قینچی اور آگ سے بال کاٹنا ہوا پرانا

حجاموں نے کنگھی اور قنچی چھوڑ کر ہتھوڑا اور کلہاڑا اٹھا لیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اب بال کاٹنے کے لیے قینچی کی ضرورت نہیں پڑے گی کیونکہ کلہاڑے اور ہتھوڑے سے بھی بال کاٹے جا سکتے ہیں۔

ہیئر ڈریسر، یا حجام سے آپ کا آمنا سامنا تو ضرور ہوتا ہو گا۔ آج ہم آپ کو ایک ایسے حجام یا ہیئر ڈریسر سے ملوانے جا رہے ہیں جو زلف تراشی کے کام میں ید طولی رکھتا ہے اور بال کسی قینچی یا آگ سے کاٹنے کی بجائے ہتھوڑے یا کلہاڑے سے تراشتا ہے۔

جی ہاں ہتھوڑا اور کلہاڑا آپ نے صحیح پڑھا۔

جہاں تک بال تراشنے کا تعلق ہے تو اس میں حجام کو اپنے فن میں مہارت ہوتی اور بال کٹوانے والا آسانی سے اپنے بال کٹواتا ہے لیکن اب گاہک کو بھی بڑے دل کا ہونا لازمی ہے کیونکہ یہاں اس کے بال قینچی سے نہیں بلکہ ہتھوڑے یا کلہاڑے سے تراشے جانے ہیں۔ ایک چھوٹی سی غلطی سے آپ کا کام تمام ہو سکتا ہے۔

یہاں گاہک کی بھی ہمت کی داد دینی چاہیے جو اپنی جان جوکھم میں ڈال کر بال کٹواتا ہے۔